1. اس فورم پر جواب بھیجنے کے لیے آپ کا صارف بننا ضروری ہے۔ اگر آپ ہماری اردو کے صارف ہیں تو لاگ ان کریں۔

شعر مکمل کریں

'اشعار اور گانوں کے کھیل' میں موضوعات آغاز کردہ از واصف حسین, ‏5 ستمبر 2006۔

  1. ملک بلال
    آف لائن

    ملک بلال منتظم اعلیٰ سٹاف ممبر

    شمولیت:
    ‏12 مئی 2010
    پیغامات:
    22,416
    موصول پسندیدگیاں:
    7,511
    ملک کا جھنڈا:
    نہ بزم اپنی نہ اپنا ساقی نہ شیشہ اپنا نہ جام اپنا
    اگر یہی ہے نظام ہستی تو زندگی کو سلام اپنا
    -----
    وفا کریں گے ، نباہیں گے ، بات مانیں گے
     
    پاکستانی55 نے اسے پسند کیا ہے۔
  2. مخلص انسان
    آف لائن

    مخلص انسان ممبر

    شمولیت:
    ‏10 اکتوبر 2015
    پیغامات:
    5,415
    موصول پسندیدگیاں:
    2,746
    ملک کا جھنڈا:
    وفا کریں گے ، نباہیں گے ، بات مانیں گے
    تمہیں بھی یاد ہے کچھ یہ کلام کس کا تھا
    ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
    لو آج ہم نے توڑ دیا رشتہ امید
     
  3. ارشین بخاری
    آف لائن

    ارشین بخاری ممبر

    شمولیت:
    ‏13 جنوری 2011
    پیغامات:
    6,125
    موصول پسندیدگیاں:
    901
    ملک کا جھنڈا:
    لو آج ہم نے توڑ دیا رشتہ امید
    بھی اب کسی سے گلہ نہ کریں گے ہم.
    --------------
    پرتوِ رخ کے کرشمے تھے سرِ راہ گذار
     
    پاکستانی55 اور ملک بلال .نے اسے پسند کیا ہے۔
  4. ملک بلال
    آف لائن

    ملک بلال منتظم اعلیٰ سٹاف ممبر

    شمولیت:
    ‏12 مئی 2010
    پیغامات:
    22,416
    موصول پسندیدگیاں:
    7,511
    ملک کا جھنڈا:
    پرتوِ رخ کے کرشمے تھے سرِ راہ گذار
    ذرّے جو خاک سے اٹھے ، وہ صنم خانہ بنے
    -----
    لام نستعلیق کا ہے اُس بُتِ خوشخط کی زُلف
     
    ارشین بخاری اور پاکستانی55 .نے اسے پسند کیا ہے۔
  5. مخلص انسان
    آف لائن

    مخلص انسان ممبر

    شمولیت:
    ‏10 اکتوبر 2015
    پیغامات:
    5,415
    موصول پسندیدگیاں:
    2,746
    ملک کا جھنڈا:
    لام نستعلیق کا ہے اس بت خوشخط کی زلف
    ہم تو کافر ہوں اگر بندے نہ ہوں اسلام کے
    ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
    ہو کا عالم ہے گرفتاروں کی آبادی میں
     
  6. ارشین بخاری
    آف لائن

    ارشین بخاری ممبر

    شمولیت:
    ‏13 جنوری 2011
    پیغامات:
    6,125
    موصول پسندیدگیاں:
    901
    ملک کا جھنڈا:
    ہُو کا عالم ہے گرفتاروں کی آبادی میں
    ہم تو سنتے تھے کہ زنجیرِ گراں بولتی ہے
    ----------------
    جی میں ہے اک اب نیا عالم کریں ایجاد ہم
     
    پاکستانی55 نے اسے پسند کیا ہے۔
  7. مخلص انسان
    آف لائن

    مخلص انسان ممبر

    شمولیت:
    ‏10 اکتوبر 2015
    پیغامات:
    5,415
    موصول پسندیدگیاں:
    2,746
    ملک کا جھنڈا:
    یہ زمیں ہے بے وفا ، یہ آسماں بے مہر ہے
    جی میں ہے ایک اب نیا عالم کریں ایجاد ہم
    ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
    تمہارے خط میں نیا ایک سلام کس کا تھا
     
  8. ارشین بخاری
    آف لائن

    ارشین بخاری ممبر

    شمولیت:
    ‏13 جنوری 2011
    پیغامات:
    6,125
    موصول پسندیدگیاں:
    901
    ملک کا جھنڈا:
    تمہارے خط میں نیا اک سلام کس کا تھا
    نہ تھا رقیب تو آخر وہ نام کس کا تھا
    -----------------
    کہ غلامی میں بدل جاتا ہے قوموں کا ضمیر
     
  9. مخلص انسان
    آف لائن

    مخلص انسان ممبر

    شمولیت:
    ‏10 اکتوبر 2015
    پیغامات:
    5,415
    موصول پسندیدگیاں:
    2,746
    ملک کا جھنڈا:
    تھا جو ناخواب بتدریج وہی خواب ہوا
    کہ غلامی میں بدل جاتا ہے قوموں کا ضمیر
    ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
    تم ہو کہ مدتوں میں بھی میرے نہ ہو سکے
     
  10. ارشین بخاری
    آف لائن

    ارشین بخاری ممبر

    شمولیت:
    ‏13 جنوری 2011
    پیغامات:
    6,125
    موصول پسندیدگیاں:
    901
    ملک کا جھنڈا:
    تم ہو کہ مدتوں میں بھی میرے نہ ہو سکے
    میں ہوں کہ ایک بات میں دیوانہ ہو گیا
    ---------------
    کردیا موسیٰ کو جس چیز نے بےہوش عدم
     
  11. مخلص انسان
    آف لائن

    مخلص انسان ممبر

    شمولیت:
    ‏10 اکتوبر 2015
    پیغامات:
    5,415
    موصول پسندیدگیاں:
    2,746
    ملک کا جھنڈا:
    ﮐﺮﺩﯾﺎ ﻣﻮﺳﯽ ﮐﻮ ﺟﺲ ﭼﯿﺰ ﻧﮯ ﺑﮯ ﮨﻮﺵ ﻋﺪﻡ
    ﺑﮯ ﻧﻘﺎﺑﯽ ﻧﮩﯿﮟ ﻭﮦ ﻧﯿﻢ ﺣﺠﺎﺑﯽ ﮨﻮﮔﯽ ۔ ۔ ۔
    ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
    اے غم زندگی نہ ہو ناراض
     
  12. ارشین بخاری
    آف لائن

    ارشین بخاری ممبر

    شمولیت:
    ‏13 جنوری 2011
    پیغامات:
    6,125
    موصول پسندیدگیاں:
    901
    ملک کا جھنڈا:
    اے غم زندگی نہ ہو ناراض
    مجھ کو عادت ہے مسکرانے کی
    عبد الحمید عدم
    -----------------------
    سانحے وہ تھے کہ پتھرا گئیں آنکھیں میری
    -
     
  13. مخلص انسان
    آف لائن

    مخلص انسان ممبر

    شمولیت:
    ‏10 اکتوبر 2015
    پیغامات:
    5,415
    موصول پسندیدگیاں:
    2,746
    ملک کا جھنڈا:
    سانحے وہ تھے کہ پتھرا گئیں آنکھیں میری
    زخم یہ ہیں تو میرے دل کو بھی پتھر کر دے
    ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
    یہ شفق چاند ستارے نہیں اچھے لگتے
     
  14. ارشین بخاری
    آف لائن

    ارشین بخاری ممبر

    شمولیت:
    ‏13 جنوری 2011
    پیغامات:
    6,125
    موصول پسندیدگیاں:
    901
    ملک کا جھنڈا:
    یہ شفق چاند ستارے نہیں اچھے لگتے
    تم نہیں ہو تو نظارےنہیں اچھے لگتے
    -----------------------------
    یہ دل کا ٹپکنا، کہ ٹھہرتا ہی نہیں ہے
     
  15. ارشین بخاری
    آف لائن

    ارشین بخاری ممبر

    شمولیت:
    ‏13 جنوری 2011
    پیغامات:
    6,125
    موصول پسندیدگیاں:
    901
    ملک کا جھنڈا:
    یہ شعر اتنا مشکل تو نہیں تھا کسی نے مکمل ہی نہیں کیا
    یہ دل کا ٹپکنا، کہ ٹھہرتا ہی نہیں ہے
    یارو کوئی نشتر، کوئی مرہم کہ چلا میں
    ==========
    ہوئی ہے حضرتِ ناصح سے گفتگو جس شب
     
  16. مخلص انسان
    آف لائن

    مخلص انسان ممبر

    شمولیت:
    ‏10 اکتوبر 2015
    پیغامات:
    5,415
    موصول پسندیدگیاں:
    2,746
    ملک کا جھنڈا:
    ہوئی ہے حضرت ناصح سے گفتگو جس شب
    وہ شب ضرور سر کوئے یار گزری ہے
    ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
    میری وفا ہے اس کی اداسی کا ایک باب
     
  17. آزاد حسین
    آف لائن

    آزاد حسین ممبر

    شمولیت:
    ‏23 جنوری 2016
    پیغامات:
    51
    موصول پسندیدگیاں:
    27
    ملک کا جھنڈا:
    میری وفا ہے اس کی اداسی کا اک باب
    مدت ھوئی ہے جس سے مجھے اب ملے ہوئے -----------
    عزیز حامد ------+------

    ﺗﯿﺮﮮ ﺩﺷﻤﻨﻮﮞ ﻧﮯ
    ﺗﯿﺮﮮ ﭼﻤﻦ ﻣﯿﮟ
    ﺧﺰﺍﮞ ﮐﺎ ﺟﺎﻝ ﺑﭽﮭﺎ
    ﺩﯾﺎ
     
  18. ارشین بخاری
    آف لائن

    ارشین بخاری ممبر

    شمولیت:
    ‏13 جنوری 2011
    پیغامات:
    6,125
    موصول پسندیدگیاں:
    901
    ملک کا جھنڈا:
    میں تیرے مزار کی جالیوں ہی کی مدحتوں میں مگن رہا
    تیرے دشمنوں نے تیرے چمن میں خزاں کا جال بچھا دیا
    ------------------
    اس طرح خوش ہوں کسی کے وعدۂ فردا پہ میں
     
    پاکستانی55 نے اسے پسند کیا ہے۔
  19. مخلص انسان
    آف لائن

    مخلص انسان ممبر

    شمولیت:
    ‏10 اکتوبر 2015
    پیغامات:
    5,415
    موصول پسندیدگیاں:
    2,746
    ملک کا جھنڈا:
    اس طرح خوش ہوں کسی کے وعدہ فردا پہ میں
    درحقیقت جیسے مجھ کو اعتبار آہی گیا
    ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
    گرتے آنسو پوچھیے رخسار سے
     
  20. مخلص انسان
    آف لائن

    مخلص انسان ممبر

    شمولیت:
    ‏10 اکتوبر 2015
    پیغامات:
    5,415
    موصول پسندیدگیاں:
    2,746
    ملک کا جھنڈا:
    گرتے آنسو پوچھیے رخسار سے
    سنگ کٹ جاتے ہیں اکثر دھار سے
    ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
    گرتے ہیں سمندر میں بڑے شوق سے دریا
     
    پاکستانی55 نے اسے پسند کیا ہے۔
  21. آزاد حسین
    آف لائن

    آزاد حسین ممبر

    شمولیت:
    ‏23 جنوری 2016
    پیغامات:
    51
    موصول پسندیدگیاں:
    27
    ملک کا جھنڈا:
    ﮔﺮﺗﮯ ﮨﯿﮟ ﺳﻤﻨﺪﺭ ﻣﯿﮟ ﺑﮍﮮ ﺷﻮﻕ ﺳﮯ ﺩﺭﯾﺎ
    ﻟﯿﮑﻦ ﮐﺴﯽ ﺩﺭﯾﺎ ﻣﯿﮟ ﺳﻤﻨﺪﺭ ﻧﮩﯿﮟ ﮔﺮﺗﺎ- ------------
    آنکھیں کہیں لگی تھی دریچہ کہیں کا تھا
     
    پاکستانی55 نے اسے پسند کیا ہے۔
  22. مخلص انسان
    آف لائن

    مخلص انسان ممبر

    شمولیت:
    ‏10 اکتوبر 2015
    پیغامات:
    5,415
    موصول پسندیدگیاں:
    2,746
    ملک کا جھنڈا:
    آنکھیں کہیں لگی تھیں دریچہ کہیں کا تھا
    آیا کہیں ہوں اور ارادہ کہیں کا تھا ۔ ۔ ۔
    ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
    جو مجھ میں تجھ میں چلا آ رہا ہے برسوں سے
     
  23. آزاد حسین
    آف لائن

    آزاد حسین ممبر

    شمولیت:
    ‏23 جنوری 2016
    پیغامات:
    51
    موصول پسندیدگیاں:
    27
    ملک کا جھنڈا:
    جوﻣﺠﮫ ﻣﯿﮟ ﺗﺠﮫ ﻣﯿﮟ ﭼﻼ ﺁ ﺭﮨﺎ ﮨﮯ ﺑﺮﺳﻮﮞ ﺳﮯ
    ﮐﮩﯿﮟ ﺣﯿﺎﺕ ﺍﺳﯽ ﻓﺎﺻﻠﮯ ﮐﺎ ﻧﺎﻡ ﻧﮧ ﮨﻮ..... ------------
    ﮔﺮ ﺍﺭﺽ ﻭ ﺳﻤﺎ ﮐﯽ ﻣﺤﻔﻞ ﻣﯿﮟ ﻟﻮﻻﮎ ﻟﻤﺎ ﮐﺎ ﺷﻮﺭ ﻧﮧ ﮨﻮ
     
    ارشین بخاری نے اسے پسند کیا ہے۔
  24. مخلص انسان
    آف لائن

    مخلص انسان ممبر

    شمولیت:
    ‏10 اکتوبر 2015
    پیغامات:
    5,415
    موصول پسندیدگیاں:
    2,746
    ملک کا جھنڈا:
    گر ارض و سما کی محفل میں لولاک لما کا شور نہ ہو
    یہ رنگ نہ ہو گلزاروں میں ، یہ نور نہ ہو سیاروں میں
    ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
    کیا بری ہے میری تقدیر الہی توبہ
     
  25. ارشین بخاری
    آف لائن

    ارشین بخاری ممبر

    شمولیت:
    ‏13 جنوری 2011
    پیغامات:
    6,125
    موصول پسندیدگیاں:
    901
    ملک کا جھنڈا:
  26. نظام الدین
    آف لائن

    نظام الدین ممبر

    شمولیت:
    ‏17 فروری 2015
    پیغامات:
    1,981
    موصول پسندیدگیاں:
    2,049
    ملک کا جھنڈا:
    ۔۔۔۔۔۔۔۔۔
    یہ بزم دیکھی ہے میری نگاہ نے کہ جہاں
    بغیر شمع بھی جلتے رہے ہیں پروانے
    (صوفی تبسم)
    ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
    وعدے کی شب نہیں ہے یہ دن ہے حساب کا

     
  27. مخلص انسان
    آف لائن

    مخلص انسان ممبر

    شمولیت:
    ‏10 اکتوبر 2015
    پیغامات:
    5,415
    موصول پسندیدگیاں:
    2,746
    ملک کا جھنڈا:
    وہ کیا ہیں ، آج ان کے فرشتے بھی آئیں گے
    وعدے کی شب نہیں ہے یہ دن ہے حساب کا
    ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
    ہر پل دھیان میں بسنے والے لوگ فسانے ہوجاتے ہیں
     
    نظام الدین نے اسے پسند کیا ہے۔
  28. نظام الدین
    آف لائن

    نظام الدین ممبر

    شمولیت:
    ‏17 فروری 2015
    پیغامات:
    1,981
    موصول پسندیدگیاں:
    2,049
    ملک کا جھنڈا:
    ۔۔۔۔۔۔۔۔
    امجد اسلام امجد کی بہت خوبصورت غزل کا شعر ہے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ پوری غزل حاضر ہے

    ہر پل دھیان میں بسنے والے لوگ فسانے ہو جاتے ہیں
    آنکھیں بوڑھی ہو جاتی ہیں خواب پرانے ہو جاتے ہیں

    ساری بات تعلق والی جذبوں کی سچائی تک ہے
    میل دلوں میں آجائے تو گھر ویرانے ہو جاتے ہیں

    منظر منطر کھل اٹھتی ہے پیراہن کی قوس قزح
    موسم تیرے ہنس پڑنے سے اور سہانے ہو جاتے ہیں

    جھونپڑیوں میں ہر اک تلخی پیدا ہوتے مل جاتی ہے
    اسی لیے تو وقت سے پہلے طفل سیانے ہوجاتے ہیں

    موسم عشق کی آہٹ سے ہی ہر اک چیز بدل جاتی ہے
    راتیں پاگل کردیتی ہیں دن دیوانے ہو جاتے ہیں

    دنیا کے اس شور نے امجد کیا کیا ہم سے چھین لیا ہے
    خود سے بات کیے بھی اب تو کئی زمانے ہو جاتے ہیں
    ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

    تیرے فراق میں جیسے خیال مفلس کا
     
    پاکستانی55 نے اسے پسند کیا ہے۔
  29. آصف احمد بھٹی
    آف لائن

    آصف احمد بھٹی ناظم خاص سٹاف ممبر

    شمولیت:
    ‏27 مارچ 2011
    پیغامات:
    40,593
    موصول پسندیدگیاں:
    6,030
    ملک کا جھنڈا:
    تیرے فراق میں جیسے خیال مفلس کا
    گئی ہے فکر پریشاں کہاں کہاں میری


    ------


    لو ہوچکی شفا کہ مداوائے دردِ دل
     
  30. حنا شیخ
    آف لائن

    حنا شیخ ممبر

    شمولیت:
    ‏21 جولائی 2016
    پیغامات:
    2,709
    موصول پسندیدگیاں:
    1,572
    ملک کا جھنڈا:
    دل ہی تو ہے نہ سنگ و خشت درد سے بھر نہ آئے کیوں؟
    روئیں گے ہم ہزار بار کوئی ہمیں‌ستائے کیوں؟‌
    -------------------------------------------
    کیوں نہ ہو شکوہ سرا ایک زمانہ دل کا
     

اس صفحے کو مشتہر کریں