1. اس فورم پر جواب بھیجنے کے لیے آپ کا صارف بننا ضروری ہے۔ اگر آپ ہماری اردو کے صارف ہیں تو لاگ ان کریں۔

یا ملاقات کے امکان سے باہر ہو جا

'اردو شاعری' میں موضوعات آغاز کردہ از intelligent086, ‏25 اکتوبر 2019۔

  1. intelligent086
    آف لائن

    intelligent086 ممبر

    شمولیت:
    ‏28 اپریل 2013
    پیغامات:
    1,722
    موصول پسندیدگیاں:
    206
    ملک کا جھنڈا:
    یا ملاقات کے امکان سے باہر ہو جا
    یا کسی دن مری فرصت کو میسّر ہو جا
    تجھ کو معلوم نہیں ہے مری خواہش کیا ہے
    مجھ پہ احسان نہ کر اور سبک سر ہو جا
    ارتقا کیا تری قسمت میں نہیں لکھا ہے؟
    اب تمنّا سے گزر میرا مقدّر ہو جا
    بے حسی گر تری فطرت ہے تو ایسا کبھی کر
    اپنے حق میں بھی کسی روز تُو پتھر ہو جا
    اس سے پہلے تو غزل بھی تھی گریزاں مجھ سے
    حالتِ دل تُو ذرا اور بھی ابتر ہو جا
    میں جہاں پائوں رکھوں واں سے بگولا اُٹھّے
    ریگِ صحرا مری وحشت کے برابر ہو جا
    اے مرے حرفِ سخن تُو مجھے حیراں کر دے
    تُو کسی دن مری امید سے بڑھ کر ہو جا
    عرفان ستار​
     

اس صفحے کو مشتہر کریں