1. اس فورم پر جواب بھیجنے کے لیے آپ کا صارف بننا ضروری ہے۔ اگر آپ ہماری اردو کے صارف ہیں تو لاگ ان کریں۔

ہو جائے کچھ سیاست پر ۔ شاعری،باتیں ،تجزیہ ،اور کچھ بھی ،

'اردو شاعری' میں موضوعات آغاز کردہ از حنا شیخ 2, ‏7 اکتوبر 2017۔

  1. حنا شیخ 2
    آف لائن

    حنا شیخ 2 ممبر

    شمولیت:
    ‏6 اکتوبر 2017
    پیغامات:
    206
    موصول پسندیدگیاں:
    23
    ملک کا جھنڈا:

    کرپٹ حکمرانوں کےنام ۔۔۔

    عجب غریبی کے عالم میں مر گیا اک شخص
    کہ سر پہ تاج تھا دامن میں اک دعا بھی نہ تھی
    [​IMG]



  2. زنیرہ عقیل
    آف لائن

    زنیرہ عقیل ممبر

    شمولیت:
    ‏27 ستمبر 2017
    پیغامات:
    330
    موصول پسندیدگیاں:
    174
    ملک کا جھنڈا:
    دیپ جس کامحلات ہی میں جلے
    چند لوگوں کی خوشیوں کو لے کر چلے
    وہ جو سائے میں ہر مصلحت کے پلے
    ایسے دستور کو صبح بے نور کو
    میں نہیں مانتا میں نہیں جانتا
  3. زنیرہ عقیل
    آف لائن

    زنیرہ عقیل ممبر

    شمولیت:
    ‏27 ستمبر 2017
    پیغامات:
    330
    موصول پسندیدگیاں:
    174
    ملک کا جھنڈا:
    حال اب تک وہی ہیں فقیروں کے
    دن پھرے ہیں فقط وزیروں کے
    ہر بلاول ہے دیس کا مقروض
    پاؤں ننگے ہیں بے نظیروں کے
  4. زنیرہ عقیل
    آف لائن

    زنیرہ عقیل ممبر

    شمولیت:
    ‏27 ستمبر 2017
    پیغامات:
    330
    موصول پسندیدگیاں:
    174
    ملک کا جھنڈا:
    کوئی تو پرچم لے کر نکلے اپنے گریباں کا جالبؔ
    چاروں جا نب سناٹا ہے دیوانے یاد آتے ہیں
  5. زنیرہ عقیل
    آف لائن

    زنیرہ عقیل ممبر

    شمولیت:
    ‏27 ستمبر 2017
    پیغامات:
    330
    موصول پسندیدگیاں:
    174
    ملک کا جھنڈا:
    تو کہ ناواقفِ آدابِ غلامی ہے ابھی
    رقص زنجیر پہن کر بھی کیا جاتا ہے
    تجھ کو انکار د ر کی جرأت ہوئی تو کیونکر
    سایۂ شاہ میں اس طرح جیا جا تا ہے
  6. زنیرہ عقیل
    آف لائن

    زنیرہ عقیل ممبر

    شمولیت:
    ‏27 ستمبر 2017
    پیغامات:
    330
    موصول پسندیدگیاں:
    174
    ملک کا جھنڈا:
    محبت گولیوں سے بو رہے ہو
    وطن کا چہرہ خوں سے دھو رہے ہو
    گما ں تم کو کہ رستہ کٹ رہا ہے
    یقین مجھ کو کہ منزل کھو رہے ہو

اس صفحے کو مشتہر کریں