1. اس فورم پر جواب بھیجنے کے لیے آپ کا صارف بننا ضروری ہے۔ اگر آپ ہماری اردو کے صارف ہیں تو لاگ ان کریں۔

کراچی کے نام ،

'اشعار اور گانوں کے کھیل' میں موضوعات آغاز کردہ از حنا شیخ, ‏13 نومبر 2016۔

  1. حنا شیخ
    آف لائن

    حنا شیخ ممبر

    شمولیت:
    ‏21 جولائی 2016
    پیغامات:
    2,497
    موصول پسندیدگیاں:
    1,335
    ملک کا جھنڈا:

    میں چپ رہا تو سارا جہاں تھا مری طرف
    حق بات کی تو کون کہاں تھا مری طرف

    میں نے ستمگروں کو پکارا ہے خود فرازؔ
    ورنہ دھیان اُن کا کہاں تھا مری طرف

    احمد فرازؔ​
  2. حنا شیخ
    آف لائن

    حنا شیخ ممبر

    شمولیت:
    ‏21 جولائی 2016
    پیغامات:
    2,497
    موصول پسندیدگیاں:
    1,335
    ملک کا جھنڈا:
    جب سازِ سلاسل بجتے تھے، ہم اپنے لہو میں سجتے تھے
    وہ رِ یت ابھی تک باقی ہے، یہ رسم ابھی تک جاری ہے

    احمد فراز​
  3. حنا شیخ
    آف لائن

    حنا شیخ ممبر

    شمولیت:
    ‏21 جولائی 2016
    پیغامات:
    2,497
    موصول پسندیدگیاں:
    1,335
    ملک کا جھنڈا:
    انا کی چیخ نے انور مجھے____ بیدار کر ڈالا
    میرا سر گرنے والا تھا میری دستار سے پہلے
  4. حنا شیخ
    آف لائن

    حنا شیخ ممبر

    شمولیت:
    ‏21 جولائی 2016
    پیغامات:
    2,497
    موصول پسندیدگیاں:
    1,335
    ملک کا جھنڈا:

    میرے شہروں کو کس کی نظر لگ گئی
    میری گلیوں کی رونق کہاں کھوگئی
    روشنی بجھ گئی، آگہی سوگئی
    ہم تو نکلے تھے ہاتھوں میں سورج لئے
    رات کیوں ہوگئی رات کیوں ہوگئی؟
    طالبانِ سحر!
    ہم سے کیوں روشنی نے یہ پردہ کیا
    کیوں اندھیروں نے رستوں پہ سایہ کیا؟
    آؤ سوچیں ذرا!
    ہم بھی سوچیں ذرا، تم بھی سوچو ذرا
    آگہی سے پرے، روشنی کے بنا
    جتنے امکان ہیں، سارے مر جائیں گے
    جو بھی تخلیق ہے، وہ بکھر جائے گی
    زندگی اپنے چہرے سے ڈر جائے گی
    طالبانِ سحر آؤ سوچیں ذرا، آؤ دیکھیں ذرا!
    آرزو کے ستاروں سے دمکا ہوا
    پرچمِ روشنی کس طرح پھٹ گیا!
    کون سا موڑ ہم سے غلط کٹ گیا!
    پھول رت میں خزاں کس طرح چھا گئی
    بیج کیا بوگئی!
    ہم تو نکلے تھے ہاتھوں میں سورج لئے
    رات کیوں ہوگئی!

    امجد اسلام امج​
    چھٹا انسان نے اسے پسند کیا ہے۔
  5. چھٹا انسان
    آف لائن

    چھٹا انسان ممبر

    شمولیت:
    ‏13 دسمبر 2016
    پیغامات:
    1,504
    موصول پسندیدگیاں:
    489
    ملک کا جھنڈا:
    اگر تم دل گرفتہ ہو
    کہ تم کو ہار جانا ہے
    تو پھر تم ہار جاؤ گے
    اگر خاطر شکستہ ہو
    کہ تم کچھ کر نہیں سکتے
    یقینا کر نہ پاؤ گے
    یقیں سے عاری ہو کر
    منزلوں کی سمت چلنے سے
    کبھی منزل نہیں ملتی
    کبھی کنکر کے جتنے حوصلے والوں
    سے بھاری سل نہیں ہلتی
    زمانے میں ہمیشہ کامیابی
    ان کے حصے میں ہی آتی ہے
    جو اول دن سے اپنے ساتھ
    اک عزم مصمم لے کے چلتے ہیں
    کہ جن کے دل میں عزم و حوصلہ ایک ساتھ پلتے ہیں
    اگر تم چاہتے ہو کامیاب و کامراں ہونا
    تو بس رخت سفر میں
    تم یقین و عزم کی مشعل جلا رکھنا
    سفر دشوار تر ہو
    تب بھی ہمت ، حوصلہ رکھنا
    سفر آغاز جب کرنا
    تو بس اتنا سمجھ لینا
    جہاں میں کامیابی کی یقیں والوں سے یاری ہے
    اگر تم بھی یقیں رکھو
    تو پھر منزل تمھاری ہے
  6. چھٹا انسان
    آف لائن

    چھٹا انسان ممبر

    شمولیت:
    ‏13 دسمبر 2016
    پیغامات:
    1,504
    موصول پسندیدگیاں:
    489
    ملک کا جھنڈا:
    گلیوں میں خون کے دریا تھے
    گھر گھر ماتم برپا تھے
    کس گلشن کے کتنے پھول گئے
    کیا ساتھی تم سب بھول گئے ؟؟
  7. چھٹا انسان
    آف لائن

    چھٹا انسان ممبر

    شمولیت:
    ‏13 دسمبر 2016
    پیغامات:
    1,504
    موصول پسندیدگیاں:
    489
    ملک کا جھنڈا:
    ہماری جیب سے جب بھی قلم نکلتا ہے
    سیاہ شب کے یزیدوں کا دم نکلتا ہے
    حنا شیخ نے اسے پسند کیا ہے۔
  8. چھٹا انسان
    آف لائن

    چھٹا انسان ممبر

    شمولیت:
    ‏13 دسمبر 2016
    پیغامات:
    1,504
    موصول پسندیدگیاں:
    489
    ملک کا جھنڈا:
    ایک ٹوٹی ہوئی زنجیر کی فریاد ہیں ہم
    اور دنیا یہ سمجھتی ہے کہ آزاد ہیں ہم
    ۔
    کیا اس لئے تقدیر نے چنوائے تھے تنکے ؟
    بن جائے نشیمن تو کوئی آگ لگا دے
    حنا شیخ نے اسے پسند کیا ہے۔
  9. حنا شیخ
    آف لائن

    حنا شیخ ممبر

    شمولیت:
    ‏21 جولائی 2016
    پیغامات:
    2,497
    موصول پسندیدگیاں:
    1,335
    ملک کا جھنڈا:
    آج جو ہمیں غدار بولتے تھے
    وہ غداری کے مرتکب ہو رہے ہیں
    وہ کسی کو نظر نہیں آرہا
    ہمارے منہ پر تالے لگا دیے اور
    خود بھونک رہا ہے وہ
    وہ سنائی نہیں دے رہا
    وہ جو ایجنٹ کی کہانی سنا کرتے تھے
    آج سامنے کھڑا ہے گالیوں سے #نواز رہا ہے
    وہ دیکھائی نہیں دے رہا
    آج تاحیات نااہلی کا تمغہ سجا کر کھڑا ہے
    یہ بد دعاؤں کا ثمر ہے
    یہ سب نظر آرہا ہے
    #حنا شیح ​
  10. چھٹا انسان
    آف لائن

    چھٹا انسان ممبر

    شمولیت:
    ‏13 دسمبر 2016
    پیغامات:
    1,504
    موصول پسندیدگیاں:
    489
    ملک کا جھنڈا:
    وطن تھا تو آزادی ڈھونڈتا تھا
    آزاد ہوں تو وطن ڈھونڈتا ہوں
  11. حنا شیخ
    آف لائن

    حنا شیخ ممبر

    شمولیت:
    ‏21 جولائی 2016
    پیغامات:
    2,497
    موصول پسندیدگیاں:
    1,335
    ملک کا جھنڈا:
    اپنے وطن میں قید ہوں آزادی چاہتا ہوں
    بے نام جہموریت کی زنجیریں کھولنا چاہتا ہوں

    #حناشیخ ​
  12. چھٹا انسان
    آف لائن

    چھٹا انسان ممبر

    شمولیت:
    ‏13 دسمبر 2016
    پیغامات:
    1,504
    موصول پسندیدگیاں:
    489
    ملک کا جھنڈا:
    ابھی تک پاؤں سے چمٹی ہیں زنجیریں غلامی کی
    دن آجاتا ہے آزادی کا ، آزادی نہیں آتی

اس صفحے کو مشتہر کریں