1. اس فورم پر جواب بھیجنے کے لیے آپ کا صارف بننا ضروری ہے۔ اگر آپ ہماری اردو کے صارف ہیں تو لاگ ان کریں۔

پاسِ وفا نہیں کیا، اس نے بجا، نہیں کیا فاتح الدین فاتح

'اردو شاعری' میں موضوعات آغاز کردہ از سید شہزاد ناصر, ‏11 اگست 2018۔

  1. سید شہزاد ناصر
    آف لائن

    سید شہزاد ناصر ناظم سٹاف ممبر

    شمولیت:
    ‏24 مئی 2015
    پیغامات:
    1,459
    موصول پسندیدگیاں:
    2,244
    ملک کا جھنڈا:
    پاسِ وفا نہیں کیا، اس نے بجا، نہیں کیا
    تُو نے بھی اپنے ساتھ کچھ کم تو برا نہیں کیا

    اصلِ نصاب ایک شب، عمر لٹا دی سود میں
    پھر بھی یہی گلہ رہا، قرض ادا نہیں کیا

    حالتِ جبر میں عجب وصل کیا ہے اختیار
    ذکر ترا تمام عمر خود سے جدا نہیں کیا

    کوزہ گری کے نام پر مجھ کو گھڑا گیا تھا کیوں
    کوزہ گری کے نام پر اُس نے بھی کیا نہیں کیا

    حرصِ نجات کفر تھی، خاک میں خاک ہو گئے
    شوقِ وصالِ حور میں ذکرِ خدا نہیں کیا

    اوجِ ملال و رنج میں ہم کو انا رہی عزیز
    درد بلند کر لیا دستِ دعا نہیں کیا

    دل نے لہو کی آخری بوند بھی صدقہ وار دی
    خاکِ شفا بنا گیا، ردِّ بلا نہیں کیا
     
    پاکستانی55 نے اسے پسند کیا ہے۔
  2. پاکستانی55
    آف لائن

    پاکستانی55 ناظم سٹاف ممبر

    شمولیت:
    ‏6 جولائی 2012
    پیغامات:
    98,397
    موصول پسندیدگیاں:
    24,232
    ملک کا جھنڈا:
    بہت زبردست جناب بہت شکریہ
     
    سید شہزاد ناصر نے اسے پسند کیا ہے۔

اس صفحے کو مشتہر کریں