1. اس فورم پر جواب بھیجنے کے لیے آپ کا صارف بننا ضروری ہے۔ اگر آپ ہماری اردو کے صارف ہیں تو لاگ ان کریں۔

وہی آبلے ہیں وہی جلن کوئی سوزِ دل میں کمی نہیں

'اردو ادب و شعر و شاعری' میں موضوعات آغاز کردہ از جیلانی, ‏24 اکتوبر 2011۔

  1. جیلانی
    آف لائن

    جیلانی ممبر

    شمولیت:
    ‏20 ستمبر 2011
    پیغامات:
    72
    موصول پسندیدگیاں:
    0
    ملک کا جھنڈا:
    وہی آبلے ہیں وہی جلن کوئی سوزِ دل میں کمی نہیں
    جو لگا کے آگ گئے تھے تم وہ لگی ہوئی ہے بجھی نہیں



    میری زندگی پہ نہ مسکرا مجھے زندگی کاالم نہیں
    جسے تیرے غم سے ہو واسطہ وہ بہار خزاں سے کم نہیں


    تیری یاد ایسی ہے باوفا پسِ مرگ بھی نہ ہوئی جدا
    تیری یاد میں ہم مٹ گئے تیری یاد دل سے مٹی نہیں


    وہی کارواں ، وہی راستے وہ زندگی وہی مرحلے
    مگر اپنے اپنے مقام پر کبھی ہم نہیں کبھی تم نہیں


    نہ فنا میری نہ بقا میری مجھے اے شکیل نہ ڈھونڈیے
    میں کسی کا حسن خیال ہوں میرا کوئی و جود و عدم نہیں
     
  2. جیلانی
    آف لائن

    جیلانی ممبر

    شمولیت:
    ‏20 ستمبر 2011
    پیغامات:
    72
    موصول پسندیدگیاں:
    0
    ملک کا جھنڈا:
    جواب: وہی آبلے ہیں وہی جلن کوئی سوزِ دل میں کمی نہیں

     
  3. جیلانی
    آف لائن

    جیلانی ممبر

    شمولیت:
    ‏20 ستمبر 2011
    پیغامات:
    72
    موصول پسندیدگیاں:
    0
    ملک کا جھنڈا:
    جواب: وہی آبلے ہیں وہی جلن کوئی سوزِ دل میں کمی نہیں

     
  4. سین
    آف لائن

    سین ممبر

    شمولیت:
    ‏22 جولائی 2011
    پیغامات:
    5,529
    موصول پسندیدگیاں:
    5,790
    ملک کا جھنڈا:
    جواب: وہی آبلے ہیں وہی جلن کوئی سوزِ دل میں کمی نہیں

    کلام خوبصورت ہے
     
  5. ھارون رشید
    آف لائن

    ھارون رشید برادر سٹاف ممبر

    شمولیت:
    ‏5 اکتوبر 2006
    پیغامات:
    131,668
    موصول پسندیدگیاں:
    16,907
    ملک کا جھنڈا:
    جواب: وہی آبلے ہیں وہی جلن کوئی سوزِ دل میں کمی نہیں

    واہ جی واہ دل میں گھر گیا یہ کلام
     
  6. سہیل اقبال
    آف لائن

    سہیل اقبال ممبر

    شمولیت:
    ‏27 نومبر 2011
    پیغامات:
    128
    موصول پسندیدگیاں:
    0
    ملک کا جھنڈا:
    جواب: وہی آبلے ہیں وہی جلن کوئی سوزِ دل میں کمی نہیں

    کلام واقعی لاجواب ہے اور گایا بھی خوبصورت ہے
     

اس صفحے کو مشتہر کریں