1. اس فورم پر جواب بھیجنے کے لیے آپ کا صارف بننا ضروری ہے۔ اگر آپ ہماری اردو کے صارف ہیں تو لاگ ان کریں۔

میں نے اللہ سے طیبہ کی دعا مانگی ہے ۔۔ سید اظہار اشرف کچھوچھوی

'نعتِ سرکارِ دو عالم صلی اللہ علیہ وسلم' میں موضوعات آغاز کردہ از محمد رضوان, ‏26 دسمبر 2020۔

  1. محمد رضوان
    آف لائن

    محمد رضوان ممبر

    شمولیت:
    ‏16 اپریل 2018
    پیغامات:
    10,165
    موصول پسندیدگیاں:
    21,145
    ملک کا جھنڈا:
    میں نے اللہ سے طیبہ کی دعا مانگی ہے
    گنبدِ خضریٰ کی پر کیف فضا مانگی ہے

    کاش بن جائے مدینہ بھی ہمارا مسکن
    اک تڑپتے ہوئے دل کی یہ دوامانگی ہے

    اہلِ دل کو تو ملا کرتا ہے سکوں طیبہ میں
    ہم نے بھی دامنِ خضریٰ کی ہوا مانگی ہے

    لاج رکھتے ہیں گنہگاروں کی سرکار مرے
    جس نے دربارِ مقدس کی رضا مانگی ہے

    کتنا خوش بخت ہے طیبہ میں اگر موت آئے
    زندگی بنتی ہے جس سے وہ قضا مانگی ہے

    شرم عصیاں کی لئے پھرتا رہا عالم میں
    بس کرم پر ترے رحمت کی ادا مانگی ہے

    روزِ محشر کی بھلا فکر اسے کیا ہوگی
    جس نے سرکارِ مدینہ کی عطا مانگی ہے

    پَرْ تَوِ نور سے روشن ہے جہانِ امکاں
    میری تقدیر نے وہ نوری ضیا مانگی ہے

    مانگنے والوں میں اظہارؔ بھی منگتا ہے ترا
    اس نے ہر درد کی چھوکھٹ سے شفا مانگی ہے
    ------
    سید اظہار اشرف کچھوچھوی

    [​IMG]
     

اس صفحے کو مشتہر کریں