1. اس فورم پر جواب بھیجنے کے لیے آپ کا صارف بننا ضروری ہے۔ اگر آپ ہماری اردو کے صارف ہیں تو لاگ ان کریں۔

قطعاتِ گل

'آپ کی شاعری' میں موضوعات آغاز کردہ از زنیرہ عقیل, ‏4 ستمبر 2018۔

  1. زنیرہ عقیل
    آف لائن

    زنیرہ عقیل ممبر

    شمولیت:
    ‏27 ستمبر 2017
    پیغامات:
    18,175
    موصول پسندیدگیاں:
    8,700
    ملک کا جھنڈا:
    درد و غم سے نڈھال ہوں جاناں
    یہ نہ پوچھو کہ حال کیسا ہے؟
    غم ہے ، غم بھی مگر قیامت کا
    درد ہے، درد بھی قیامت کا..

    زنیرہ گُل
     
    شکیل احمد خان، آصف احمد بھٹی اور غوری نے اسے پسند کیا ہے۔
  2. زنیرہ عقیل
    آف لائن

    زنیرہ عقیل ممبر

    شمولیت:
    ‏27 ستمبر 2017
    پیغامات:
    18,175
    موصول پسندیدگیاں:
    8,700
    ملک کا جھنڈا:
    آج اک پیار ے رشتے کو نقصان ہوا
    سب کچھ بس اک لمحے کے دوران ہوا
    جاں سے بھی پیارا تھا جو کل تک مجھکو
    آج اس سے ہر رشتہ ہی انجان ہوا

    زنیرہ گل

     
    شکیل احمد خان اور آصف احمد بھٹی .نے اسے پسند کیا ہے۔
  3. زنیرہ عقیل
    آف لائن

    زنیرہ عقیل ممبر

    شمولیت:
    ‏27 ستمبر 2017
    پیغامات:
    18,175
    موصول پسندیدگیاں:
    8,700
    ملک کا جھنڈا:
    انکی نزاکت دیکھ کر نازش سمجھ بیٹھی تھی میں
    چہرے پہ چہرہ دیکھ کر سازش سمجھ بیٹھی تھی میں
    جس جگہ کھجلی نہ تھی اور وہ کھجاتا ہی رہا
    ان کی اس حرکت کو بھی خارش سمجھ بیٹھی تھی میں

    زنیرہ گل
     
    شکیل احمد خان اور آصف احمد بھٹی .نے اسے پسند کیا ہے۔
  4. زنیرہ عقیل
    آف لائن

    زنیرہ عقیل ممبر

    شمولیت:
    ‏27 ستمبر 2017
    پیغامات:
    18,175
    موصول پسندیدگیاں:
    8,700
    ملک کا جھنڈا:
    روئی ہوں اتنی اب تو رویا بھی نہیں جاتا
    اس دردِ دل کے ہوتے سویا بھی نہیں جاتا
    آنسو بہا بہا کے بے نور ہوئی ہیں آنکھیں
    اب کام مجھ سے کوئی ہویا بھی نہیں جاتا

    زنیرہ گل
     
    شکیل احمد خان، آصف احمد بھٹی اور غوری نے اسے پسند کیا ہے۔
  5. زنیرہ عقیل
    آف لائن

    زنیرہ عقیل ممبر

    شمولیت:
    ‏27 ستمبر 2017
    پیغامات:
    18,175
    موصول پسندیدگیاں:
    8,700
    ملک کا جھنڈا:
    کسی کو فرق نہیں پڑتا میرے ہونے نہ ہونے سے
    کسی کو فرق نہیں پڑتا میرے رونے نہ رونے سے
    وہ جو پورے ہیں اپنی ذات میں اک دن بھلا دینگے
    انہیں کیا فرق پڑتا ہے میرے کھونے نہ کھونے سے

    زنیرہ گل
     
    شکیل احمد خان، آصف احمد بھٹی اور غوری نے اسے پسند کیا ہے۔
  6. زنیرہ عقیل
    آف لائن

    زنیرہ عقیل ممبر

    شمولیت:
    ‏27 ستمبر 2017
    پیغامات:
    18,175
    موصول پسندیدگیاں:
    8,700
    ملک کا جھنڈا:
    جو بھی آتا ہے میرا امتحان لیتا ہے
    اور اس عمل کو وہ حق بھی مان لیتا ہے
    دردِ گل کا انہیں احساس تک نہیں شاید
    جو گل کو توڑ کر گل کی جان لیتا ہے

    زنیرہ گل
    [​IMG]
     
    شکیل احمد خان، آصف احمد بھٹی اور غوری نے اسے پسند کیا ہے۔
  7. غوری
    آف لائن

    غوری ممبر

    شمولیت:
    ‏18 جنوری 2012
    پیغامات:
    38,242
    موصول پسندیدگیاں:
    11,507
    ملک کا جھنڈا:
    واہ واہ
    اچھے قطعا ت ہیں۔
     
    شکیل احمد خان اور زنیرہ عقیل .نے اسے پسند کیا ہے۔
  8. زنیرہ عقیل
    آف لائن

    زنیرہ عقیل ممبر

    شمولیت:
    ‏27 ستمبر 2017
    پیغامات:
    18,175
    موصول پسندیدگیاں:
    8,700
    ملک کا جھنڈا:
    بہت بہت شکریہ
     
    شکیل احمد خان نے اسے پسند کیا ہے۔
  9. زنیرہ عقیل
    آف لائن

    زنیرہ عقیل ممبر

    شمولیت:
    ‏27 ستمبر 2017
    پیغامات:
    18,175
    موصول پسندیدگیاں:
    8,700
    ملک کا جھنڈا:
    دیکھ لی ہے تشنگی بیکار کی
    پیروی کرنی ہے اب افکار کی
    ہم نے جو دولت کو درجہ دیا
    اب ضرورت ہے بھلے کردار کی


    زنیرہ گل
     
    شکیل احمد خان، آصف احمد بھٹی اور غوری نے اسے پسند کیا ہے۔
  10. زنیرہ عقیل
    آف لائن

    زنیرہ عقیل ممبر

    شمولیت:
    ‏27 ستمبر 2017
    پیغامات:
    18,175
    موصول پسندیدگیاں:
    8,700
    ملک کا جھنڈا:
    پریشاں ہوں مرے دل کی حقیقت جان لو اب تو
    عداوت چھوڑ دو میری محبت مان لو اب تو
    طلاطم ہے پبا سینے میں اب طوفاں کو آنا ہے
    خدارا روک لو طوفاں کو دل میں ٹھان لو اب تو

    زنیرہ گل​
     
    Last edited: ‏16 اکتوبر 2018
    شکیل احمد خان، آصف احمد بھٹی اور غوری نے اسے پسند کیا ہے۔
  11. غوری
    آف لائن

    غوری ممبر

    شمولیت:
    ‏18 جنوری 2012
    پیغامات:
    38,242
    موصول پسندیدگیاں:
    11,507
    ملک کا جھنڈا:
    تم عظمتوں کا نشاں ہو
    تم حقیقتوں کا بیاں ہو

    تم صبح، تم ہی شام ہو
    تم ہی وفاؤں کا نام ہو


    عبدالقیوم خان غوری​
     
    آصف احمد بھٹی اور زنیرہ عقیل .نے اسے پسند کیا ہے۔
  12. زنیرہ عقیل
    آف لائن

    زنیرہ عقیل ممبر

    شمولیت:
    ‏27 ستمبر 2017
    پیغامات:
    18,175
    موصول پسندیدگیاں:
    8,700
    ملک کا جھنڈا:
    کوئی گل اور کوئی گلاب کہتا ہے مجھے
    کوئی محبت کی کتاب کہتا ہے مجھے
    حقیقت میں جو گل کو جانتا ہے وہ
    نظر کا دھوکا اورسراب کہتا ہے مجھے

    زنیرہ گل
     
    غوری، شکیل احمد خان اور آصف احمد بھٹی نے اسے پسند کیا ہے۔
  13. زنیرہ عقیل
    آف لائن

    زنیرہ عقیل ممبر

    شمولیت:
    ‏27 ستمبر 2017
    پیغامات:
    18,175
    موصول پسندیدگیاں:
    8,700
    ملک کا جھنڈا:
    کیوں جنازے یہ حرمت کے نکالے جاتے ہیں
    کیوں قصیدے یہ عصمت کے اچھالے جاتے ہیں
    کائنات میں رنگ گر وجود زن سےہے
    پھول پھر کیوں یہ بھٹی میں ڈالے جاتے ہیں

    زنیرہ گل​
     
    غوری، شکیل احمد خان اور آصف احمد بھٹی نے اسے پسند کیا ہے۔
  14. زنیرہ عقیل
    آف لائن

    زنیرہ عقیل ممبر

    شمولیت:
    ‏27 ستمبر 2017
    پیغامات:
    18,175
    موصول پسندیدگیاں:
    8,700
    ملک کا جھنڈا:
    پھر یہ کیوں انداز و رنگِ انجمن پھیکا ہوا
    میرے اشکوں سے دلِ اہل چمن کو کیا ہوا
    عادت ہے زخموں کی اور یہ مری فطرت بھی ہے
    میرے ٹوٹے لفظ تھے اہل سخن کو کیا ہوا

    زنیرہ گل
     
    غوری، شکیل احمد خان اور آصف احمد بھٹی نے اسے پسند کیا ہے۔
  15. زنیرہ عقیل
    آف لائن

    زنیرہ عقیل ممبر

    شمولیت:
    ‏27 ستمبر 2017
    پیغامات:
    18,175
    موصول پسندیدگیاں:
    8,700
    ملک کا جھنڈا:
    پھر یہ کیوں انداز و رنگِ انجمن پھیکا ہوا
    میرے اشکوں سے دلِ اہل چمن کو کیا ہوا
    عادت ہے زخموں کی اور یہ مری فطرت بھی ہے
    میرے ٹوٹے لفظ تھے اہل سخن کو کیا ہوا

    زنیرہ گل
     
    شکیل احمد خان اور آصف احمد بھٹی .نے اسے پسند کیا ہے۔
  16. آصف احمد بھٹی
    آف لائن

    آصف احمد بھٹی ناظم خاص سٹاف ممبر

    شمولیت:
    ‏27 مارچ 2011
    پیغامات:
    40,593
    موصول پسندیدگیاں:
    6,027
    ملک کا جھنڈا:
    سارے ہی اشعار بہت خوب ہیں ۔ ۔ ۔ بہت ہی عمدہ خیال ۔ ۔ ۔ ماشاء اللہ ۔ ۔ ۔

    قطعہ کی تعریف کچھ یوں ہے کہ دو یا دو سے زیادہ ایسے ابیات جن میں کسی ایک ہی موضوع کو سخن میں ڈھالا گیا ہوں ، وہ قطعہ کہلاتا ہے ۔ اب یہ قطعات کسی غزل کا حصہ بھی ہو سکتے ہیں یا الگ سے ، البتہ ان میں بحر ، اوزان ، قافیہ اور ردیف کا خیال رکھا جاتا ہے ۔
     
    شکیل احمد خان اور زنیرہ عقیل .نے اسے پسند کیا ہے۔
  17. زنیرہ عقیل
    آف لائن

    زنیرہ عقیل ممبر

    شمولیت:
    ‏27 ستمبر 2017
    پیغامات:
    18,175
    موصول پسندیدگیاں:
    8,700
    ملک کا جھنڈا:
    آگ نفرت کی وہ جلا کے چلا
    اپنا دامن مگر بچا کے چلا
    چار سُو تھی منافقت اے گل
    مرا خلوص سر اٹھا کے چلا

    زنیرہ گل
    [​IMG]
     
    غوری، آصف احمد بھٹی اور شکیل احمد خان نے اسے پسند کیا ہے۔
  18. شکیل احمد خان
    آف لائن

    شکیل احمد خان ممبر

    شمولیت:
    ‏10 نومبر 2014
    پیغامات:
    1,069
    موصول پسندیدگیاں:
    785
    ملک کا جھنڈا:
    عجیب.jpg
     
    زنیرہ عقیل نے اسے پسند کیا ہے۔
  19. زنیرہ عقیل
    آف لائن

    زنیرہ عقیل ممبر

    شمولیت:
    ‏27 ستمبر 2017
    پیغامات:
    18,175
    موصول پسندیدگیاں:
    8,700
    ملک کا جھنڈا:
    جو بھی سچ ہے قلم وہ کہتا ہے
    جب بھی جذبات میں یہ بہتا ہے
    مزاجِ گل میں نازکی ہے بہت
    موسموں کے ستم بھی سہتا ہے

    زنیرہ گل
    gul.jpg
     
    غوری اور آصف احمد بھٹی .نے اسے پسند کیا ہے۔
  20. زنیرہ عقیل
    آف لائن

    زنیرہ عقیل ممبر

    شمولیت:
    ‏27 ستمبر 2017
    پیغامات:
    18,175
    موصول پسندیدگیاں:
    8,700
    ملک کا جھنڈا:
    ان کو پتہ نہیں ہے کہ سوتی رہی ہوں میں
    یا اپنے ہی خیالوں میں کھوتی رہی ہوں میں
    رخ پر عیاں نہ ہو سکی پژمردگی گل کی
    چہرے کو اپنے اشک سے دھوتی رہی ہوں میں
    زنیرہ گل
    [​IMG]
     
    آصف احمد بھٹی اور غوری .نے اسے پسند کیا ہے۔
  21. غوری
    آف لائن

    غوری ممبر

    شمولیت:
    ‏18 جنوری 2012
    پیغامات:
    38,242
    موصول پسندیدگیاں:
    11,507
    ملک کا جھنڈا:
    بہت خوب
     
    زنیرہ عقیل نے اسے پسند کیا ہے۔
  22. غوری
    آف لائن

    غوری ممبر

    شمولیت:
    ‏18 جنوری 2012
    پیغامات:
    38,242
    موصول پسندیدگیاں:
    11,507
    ملک کا جھنڈا:
    لذت غم.jpg

    غوری​
     
    زنیرہ عقیل نے اسے پسند کیا ہے۔
  23. زنیرہ عقیل
    آف لائن

    زنیرہ عقیل ممبر

    شمولیت:
    ‏27 ستمبر 2017
    پیغامات:
    18,175
    موصول پسندیدگیاں:
    8,700
    ملک کا جھنڈا:
    زندہ ہوئی جو مردہ محبت کبھی کبھی
    کھل اٹھتی ہے آزردہ طبیعت کبھی کبھی
    محسوس ہو فضا میں جو خوشبو کبھی کبھار
    پھر سوچتی ہوں جب بھی ہو فرصت کبھی کبھی
    زنیرہ گل
    [​IMG]
     
    شکیل احمد خان نے اسے پسند کیا ہے۔

اس صفحے کو مشتہر کریں