1. اس فورم پر جواب بھیجنے کے لیے آپ کا صارف بننا ضروری ہے۔ اگر آپ ہماری اردو کے صارف ہیں تو لاگ ان کریں۔

فارسی غزل از خواجہ قطب الدین بختیار کاکیؒ

'صوفیانہ کلام' میں موضوعات آغاز کردہ از عبدالصمد چیمہ, ‏18 دسمبر 2018۔

  1. عبدالصمد چیمہ
    آف لائن

    عبدالصمد چیمہ ممبر

    شمولیت:
    ‏3 دسمبر 2018
    پیغامات:
    19
    موصول پسندیدگیاں:
    20
    ملک کا جھنڈا:
    فارسی غزل بمعہ اردو ترجمہ از شہید محبت خواجہ قطب الدین بختیار کاکی ؒ

    اے جانِ جہاں آرزوئے روئے تو دارم
    در سر ہوسِ قامتِ دلجوئے تو دارم

    اے جان جہاں آپ کے چہرے کی زیارت کا مشتاق ہوں
    میری بزم خیال میں آپ کی سروقدی کا نشہ ہر وقت چھایا رہتا ہے

    در کعبہ و در صومعہ در دیروخرابات
    ہرجا کہ روم دیدہ دل سوئے تو دارم

    کعبہ ، کلیسا ، گرجا اور شراب خانے میں ہر جگہ
    جہاں بھی جاتا ہوں میرا دل آپ کی محبت میں سرشار رہتا ہے

    حاجی بہ طوافِ حرم کعبہ رود لیک
    من کعبہ مقصود سِر کوئے تو دارم

    حاجی حرم کعبہ کے طواف کے لئے جاتا ہے لیکن
    میرا قبلہ و کعبہ آپ کا سنگ آستاں ہے

    اندرصف طاعت چُوں بہ مسجد بہ نشستم
    دل مائل محراب دو ابروئے تو دارم

    جب بھی میں عبادت کی نیت سے مسجد میں بیٹھتا ہوں
    میرے دل کا رجوع آپ کے دونوں ابروؤں کی طرف ہوتا ہے

    ہرجا کہ رود قطبِ دیں آید بہرِتو باز
    چوں رشتہ دل بستہ بہر موئے تو دارم

    جہاں کہیں بھی قطب دیں جاتا ہے آپ ہی کے لئے جاتا ہے
    کیونکہ اُس کا دل تو آپ کی زلف سیاہ کا اسیر ہے
     
    پاکستانی55 اور ملک بلال .نے اسے پسند کیا ہے۔
  2. ملک بلال
    آف لائن

    ملک بلال منتظم اعلیٰ سٹاف ممبر

    شمولیت:
    ‏12 مئی 2010
    پیغامات:
    22,122
    موصول پسندیدگیاں:
    7,365
    ملک کا جھنڈا:
    عبدالصمد چیمہ اور پاکستانی55 .نے اسے پسند کیا ہے۔
  3. پاکستانی55
    آف لائن

    پاکستانی55 ناظم سٹاف ممبر

    شمولیت:
    ‏6 جولائی 2012
    پیغامات:
    98,397
    موصول پسندیدگیاں:
    24,234
    ملک کا جھنڈا:
    جزاک اللہ جی بہت عمدہ بہت اعلی بہت شکریہ
     
    عبدالصمد چیمہ نے اسے پسند کیا ہے۔

اس صفحے کو مشتہر کریں