1. اس فورم پر جواب بھیجنے کے لیے آپ کا صارف بننا ضروری ہے۔ اگر آپ ہماری اردو کے صارف ہیں تو لاگ ان کریں۔

غزل- محبت میں گر یہ تجارت نہ ہوتی

'آپ کی شاعری' میں موضوعات آغاز کردہ از کنول, ‏4 اگست 2006۔

  1. کنول
    آف لائن

    کنول ممبر

    شمولیت:
    ‏4 اگست 2006
    پیغامات:
    161
    موصول پسندیدگیاں:
    1
  2. عبدالجبار
    آف لائن

    عبدالجبار منتظم اعلیٰ سٹاف ممبر

    شمولیت:
    ‏27 مئی 2006
    پیغامات:
    8,595
    موصول پسندیدگیاں:
    70
    نہ کھاتے جو دھوکا اگر ہم تمہی سے
    تو دوھوکے میں‌تم کو مہارت نہ ہوتی​

    بہت خوب کنول جی!

    “ہماری اردو“ پر خوش آمدید۔

    مزید آپ کی شاعری کا انتظار رہے گا۔
     
  3. ع س ق
    آف لائن

    ع س ق ممبر

    شمولیت:
    ‏18 مئی 2006
    پیغامات:
    1,333
    موصول پسندیدگیاں:
    25
    سمجھ پاتے ہم بھی نہ اس زندگی کو
    جو ہم پہ خدا کی عنایت نہ ہوتی​

    ماشاء اللہ بہت خوب، آپ کا کلام بڑا پراثر ہے۔

    اللہ کرے زورِ کلام اور زیادہ :)

    ہماری اردو میں تشریف آوری پر خوش آمدید، ہم امید کرتے ہیں کہ آپ یونہی ہماری اردو کے صارفین کو اپنے دل کو موہ لینے والے کلام سے نوازتی رہیں گی۔
     
  4. کنول
    آف لائن

    کنول ممبر

    شمولیت:
    ‏4 اگست 2006
    پیغامات:
    161
    موصول پسندیدگیاں:
    1
    شکریہ جبار صاحب،۔۔۔۔

    آپکی محفل میں آئیں ہیں تو کچھ کر کے ہی جائیں گے،۔۔۔۔۔ :wink:
     
  5. کنول
    آف لائن

    کنول ممبر

    شمولیت:
    ‏4 اگست 2006
    پیغامات:
    161
    موصول پسندیدگیاں:
    1
    آپ کے صارفین ہمیں پڑھتے رہیں تو ضرور جناب،۔۔۔۔ :)
     
  6. لاحاصل
    آف لائن

    لاحاصل ممبر

    شمولیت:
    ‏6 جولائی 2006
    پیغامات:
    2,943
    موصول پسندیدگیاں:
    8
    کنول جی آپ کی غزل بہت اچھی ہے :)
     
  7. کنول
    آف لائن

    کنول ممبر

    شمولیت:
    ‏4 اگست 2006
    پیغامات:
    161
    موصول پسندیدگیاں:
    1
    پسند کرنے کا بہت شکریہ لا حاصل جی،۔-----
     

اس صفحے کو مشتہر کریں