1. اس فورم پر جواب بھیجنے کے لیے آپ کا صارف بننا ضروری ہے۔ اگر آپ ہماری اردو کے صارف ہیں تو لاگ ان کریں۔

دیوانہ بنانا ہے تو دیوانہ بنا دے

'اردو شاعری' میں موضوعات آغاز کردہ از intelligent086, ‏25 دسمبر 2020۔

  1. intelligent086
    آف لائن

    intelligent086 ممبر

    شمولیت:
    ‏28 اپریل 2013
    پیغامات:
    6,400
    موصول پسندیدگیاں:
    776
    ملک کا جھنڈا:

    دیوانہ بنانا ہے تو دیوانہ بنا دے
    ورنہ کہیں تقدیر تماشہ نہ بنا دے
    اے دیکھنے والے مجھے ہنس ہنس کے نہ دیکھو
    تم کو بھی محبت کہیں مجھ سا نہ بنا دے
    میں ڈھونڈ رہاہوں مری وہ شمع کہاں ہے
    جو بزم کی ہر چیز کو پروانہ بنا دے
    آخر کوئی صورت بھی تو ہو خانۂ دل کی
    کعبہ نہیں بنتا ہے تو بت خانہ بنا دے
    بہزادؔ ہر اک گام پہ اک سجدۂ مستی
    ہر ذرّے کو سنگِ درِ جانا نہ بنا دے
    بہزاد لکھنوی​
     

اس صفحے کو مشتہر کریں