1. اس فورم پر جواب بھیجنے کے لیے آپ کا صارف بننا ضروری ہے۔ اگر آپ ہماری اردو کے صارف ہیں تو لاگ ان کریں۔

حسن اخلاق کی تعلیم اور اسلام

'سیرتِ سرورِ کائنات صلی اللہ علیہ و آلہ و سلم' میں موضوعات آغاز کردہ از شہباز حسین رضوی, ‏18 اگست 2013۔

  1. شہباز حسین رضوی
    آف لائن

    شہباز حسین رضوی ممبر

    شمولیت:
    ‏1 اپریل 2013
    پیغامات:
    839
    موصول پسندیدگیاں:
    1,321
    ملک کا جھنڈا:
    اللہ تعالی نے حضور اکرم صلی اللہ علیہ والہ وسلم کو صورت وسیرت ہر لحاظ سے بے مثل مثال پیدا فرمایا،آپ کو اخلاق عالیہ کے بلند ترین مراتب پرفائز فرمایا،آپ کے خصائل حمیدہ و اخلاق عالیہ کا مبارک تذکرہ صرف قرآن کریم ہی میں نہیں بلکہ دیگر کتب سماوی میں بھی آپ کی صفات جمیلہ واخلاق کریمہ کا حسین تذکرہ فرمایا،جو برگزیدہ صفات اور فضائل وکمالات مختلف پیغمبروں کو عطا کئے گئے وہ تمام حضور اکرم صلی اللہ علیہ والہ وسلم کی ذات مجمع کمالات میں جمع کردئے گئے،آپ کے اخلاق کی رفعتوں کے بیان میں قرآن کریم ناطق ہے،ارشاد الہی ہے:
    وَإِنَّكَ لَعَلَى خُلُقٍ عَظِيمٍ ۔
    ترجمہ:اور ائے نبی !بیشک آپ اخلاق کے اعلی مرتبہ پر فائز ہیں-
    (سورۃ القلم:4)
    اخلاق کی بلندی یہ ہے کہ جو ہم سے کٹ جائیں ہم ان کے ساتھ تعلقات استوار کریں،جو قطع تعلق کریں ہم ان سے صلہ رحمی کریں،جو ہمارے حقوق تلف کریں ہم ان کے بھی حقوق ادا کریں،جو ہم پر ظلم وزيادتی کریں ہم ان کے ساتھ عفوو درگزر کا معاملہ کریں ۔
    حضور اکرم صلی اللہ علیہ والہ وسلم نے ارشاد فرمایا: تم میں قیامت کے دن سب سے زیادہ میرے نزدیک وہ شخص ہوگا جو اخلاق کے اعتبار سے سب سے اچھا ہو۔
    آپ نے ارشاد فرمایا: انما بعثت لاتمم مكارم الاخلاق .
    مجھے مکارم اخلاق کی تکمیل کے لئے مبعوث کیا گيا-
    (سنن کبری للبیہقی،ج:10،ص:192)
    حضور اکرم صلی اللہ علیہ والہ وسلم کے اخلاق عالیہ سے متعلق سیدنا انس بن مالک رضي اللہ عنہ فرماتے ہيں:
    خَدَمْتُ النَّبِىَّ صَلَّى اللهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ عَشْرَ سِنِينَ فَمَا قَالَ لِى أُفٍّ قَطُّ وَمَا قَالَ لِشَىْءٍ صَنَعْتُهُ لِمَ صَنَعْتَهُ .
    میں نے دس برس تک حضور صلی اللہ علیہ والہ وسلم کی خدمت کا شرف حاصل کیا،آپ نے مجھے کبھی "اف"تک نہیں فرمایا،اور کسی معاملہ میں یہ نہيں فرمایا کہ تم نے یہ کیوں کیا-
    (جامع ترمذی، باب ما جاء فى خلق النبى صلى الله عليه وسلمحدیث نمبر:2147)
    صحیح بخاری میں روایت ہے:
    فَقَالَتْ خَدِيجَةُ كَلاَّ وَاللَّهِ مَا يُخْزِيكَ اللَّهُ أَبَدًا ، إِنَّكَ لَتَصِلُ الرَّحِمَ ، وَتَحْمِلُ الْكَلَّ ، وَتَكْسِبُ الْمَعْدُومَ ، وَتَقْرِى الضَّيْفَ ، وَتُعِينُ عَلَى نَوَائِبِ الْحَقِّ .
    ام المؤمنین سیدہ خدیجہ رضي اللہ عنہا آپ کے اخلاق کریمہ سے متعلق بیان فرماتی ہیں: اللہ تعالیٰ آپ کی شان بلند رکھے گااور اپنی مدد کو نہیں روکے گا ، آپ تورشتہ داروں کے ساتھ بہتر سلوک کرتے ہیں ، ناداروں کابوجھ اٹھاتے ہیں ، محتاجوں کے لئے کماتے ہیں ، مہمان نوازی فرماتے ہیں اور مصیبتوں کے وقت لوگوں کے کام آتے ہیں۔
    (صحیح بخاری ، حدیث نمبر:3)
    بدخلقی آدمی کے اندر سب سے بڑا عیب ہے،اور خوش اخلاق شخص اگرچکہ وہ سیاہ رو وبدصورت ہو'محبوب وپسندیدہ ہوتا ہے۔
     
    ھارون رشید اور پاکستانی55 .نے اسے پسند کیا ہے۔
  2. پاکستانی55
    آف لائن

    پاکستانی55 ناظم سٹاف ممبر

    شمولیت:
    ‏6 جولائی 2012
    پیغامات:
    98,397
    موصول پسندیدگیاں:
    24,234
    ملک کا جھنڈا:
    جزاک اللہ جناب
     
  3. غوری
    آف لائن

    غوری ممبر

    شمولیت:
    ‏18 جنوری 2012
    پیغامات:
    38,242
    موصول پسندیدگیاں:
    11,521
    ملک کا جھنڈا:
    بے شک۔۔۔۔۔۔
    میں لوگوںسے یہی کہتا ہوں کہ حضور اکرم کی سب سے بڑی سنت اخلاق حسنی کو زندگی کا حصہ بناو۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
     
    شہباز حسین رضوی نے اسے پسند کیا ہے۔
  4. ھارون رشید
    آف لائن

    ھارون رشید برادر سٹاف ممبر

    شمولیت:
    ‏5 اکتوبر 2006
    پیغامات:
    131,668
    موصول پسندیدگیاں:
    16,907
    ملک کا جھنڈا:
    رضوی صاحب اللہ کریم آپ کے علم اور عمل میں برکت عطا فرمائیں
     
    غوری اور شہباز حسین رضوی .نے اسے پسند کیا ہے۔
  5. شہباز حسین رضوی
    آف لائن

    شہباز حسین رضوی ممبر

    شمولیت:
    ‏1 اپریل 2013
    پیغامات:
    839
    موصول پسندیدگیاں:
    1,321
    ملک کا جھنڈا:
    آمین
     
    غوری اور ھارون رشید .نے اسے پسند کیا ہے۔

اس صفحے کو مشتہر کریں