1. اس فورم پر جواب بھیجنے کے لیے آپ کا صارف بننا ضروری ہے۔ اگر آپ ہماری اردو کے صارف ہیں تو لاگ ان کریں۔

تو پھر تم آم کے پیڑوں پہ پتھر کیسے پھینکو گے

'اردو شاعری' میں موضوعات آغاز کردہ از intelligent086, ‏26 اکتوبر 2019۔

  1. intelligent086
    آف لائن

    intelligent086 ممبر

    شمولیت:
    ‏28 اپریل 2013
    پیغامات:
    1,722
    موصول پسندیدگیاں:
    206
    ملک کا جھنڈا:

    ہر اِک تصوِیر کو کھڑکی سے باہر کیسے پھینکو گے
    نگاہوں سے جو چپکے ہیں وہ منظر کیسے پھینکو گے
    جھٹک کر پھینک دو گے چند اَن چاہے خیالوں کو
    مگر کاندھوں پہ یہ رکھا ہوا سَر کیسے پھینکو گے
    اگر اِتنا ڈروگے اَپنے سر پر چوٹ لگنے سے
    تو پھر تم آم کے پیڑوں پہ پتھر کیسے پھینکو گے
    خیالوں کو بیاں کے دائروں میں لاؤ گے کیوں کر
    کمندیں بھاگتی پرچھائیوں پر کیسے پھینکو گے
    کبھی سچائیوں کی دُھوپ میں بیٹھے نہیں اَب تک
    تم اَپنے سر سے یہ خوابوں کی چادر کیسے پھینکو گے
    تو پھر کیوں اُس کو آنکھوں میں سجا کر رکھ نہیں لیتے
    تم اِس بیکار دُنیا کو اُٹھاکر کیسے پھینکو گے
    عرفان صدیقی​
     

اس صفحے کو مشتہر کریں