1. اس فورم پر جواب بھیجنے کے لیے آپ کا صارف بننا ضروری ہے۔ اگر آپ ہماری اردو کے صارف ہیں تو لاگ ان کریں۔

بدلتا ہے رنگ آسمان کیسے کیسے

'ادبی طنز و مزاح' میں موضوعات آغاز کردہ از چھٹا انسان, ‏4 جنوری 2017۔

  1. چھٹا انسان
    آف لائن

    چھٹا انسان ممبر

    شمولیت:
    ‏13 دسمبر 2016
    پیغامات:
    1,962
    موصول پسندیدگیاں:
    729
    ملک کا جھنڈا:
    ( شادی سے پہلے )

    تم جو ہنستی ہو تو پھولوں کی ادا لگتی ہو ،
    اور چلتی ہو تو ایک باد صبا لگتی ہو ،

    دونوں ہاتھوں میں چھپا لیتی ہو اپنا چہرہ ،
    مشرقی حور ہو دلہن کی حیا لگتی ہو ،

    کچھ نہ کہنا میرے کندھے پہ جھکا کر سر کو ،
    کتنی معصوم ہو ، تصویر وفا لگتی ہو ،

    بات کرتی ہو تو ساگر سے کھنک جاتے ہیں ،
    لہر کا گیت ہو ، کوئل کی صدا لگتی ہو ،

    کس طرف جاؤ گی زلفوں کے یہ بادل لے کر ،
    آج مچلی ہوئی ساون کی گھٹا لگتی ہو ،

    تم جسے دیکھ لو ، اسے پینے کی ضرورت کیا ہے ؟
    زندگی بھر جو رہے ، ایسا نشہ لگتی ہو ،

    میں نے محسوس کیا تم سے یہ باتیں کر کے ،
    تم زمانے میں زمانے سے جدا لگتی ہو !

    ( شادی کے بعد )

    تم جو ہنستی ہو تو آسیب زدہ لگتی ہو
    اور روتی ہو تو اس سے بھی برا لگتی ہو

    دونوں ہاتھوں میں چھپا لیتی ہو بٹوا میرا
    تم نری چور ہو ، چوروں کی سبھا لگتی ہو

    کچھ نہ کہنا میرے کاندھے پہ جھکا کر سر کو
    بات کرتے ہوئے ایک بھونپو پھٹا لگتی ہو

    کس طرف جاؤ گی یہ زہر بھرا پھن لے کر
    آج مچلی ہوئی ناگن کی ادا لگتی ہو

    ساتھ گر تم ہو تو دشمن کی ضرورت کیا ہے
    بلکہ ایذا میں تو دشمن سے سوا لگتی ہو

    میں نے محسوس کیا ساتھ تمہارے رہ کے
    پڑ گئی سر میرے تم ایسی بلا لگتی ہو
    ( فیس بک سے منتخب شدہ )
     
  2. اجیہ خان
    آف لائن

    اجیہ خان ممبر

    شمولیت:
    ‏4 جنوری 2017
    پیغامات:
    29
    موصول پسندیدگیاں:
    34
    ملک کا جھنڈا:
    افففففف خدایا
     

اس صفحے کو مشتہر کریں