1. اس فورم پر جواب بھیجنے کے لیے آپ کا صارف بننا ضروری ہے۔ اگر آپ ہماری اردو کے صارف ہیں تو لاگ ان کریں۔

بات جو ہوتی ہے بے بات ہوا کرتی ہے

'اردو شاعری' میں موضوعات آغاز کردہ از intelligent086, ‏25 نومبر 2019۔

  1. intelligent086
    آف لائن

    intelligent086 ممبر

    شمولیت:
    ‏28 اپریل 2013
    پیغامات:
    2,159
    موصول پسندیدگیاں:
    236
    ملک کا جھنڈا:

    بات جو ہوتی ہے بے بات ہوا کرتی ہے
    اب خرابوں میں ملاقات ہوا کرتی ہے

    صبح سے شام تو ہو جاتی ہے جیسے کیسے
    درد بڑھ جاتا ہے جب رات ہوا کرتی ہے

    ہے عجب عالمِ محرومیِ افسردہ دلاں
    سادہ ہوتے ہیں جنہیں مات ہوا کرتی ہے

    روز سجتے ہیں نئے زخم مژہ پر میری
    روز دہلیز پہ بارات ہوا کرتی ہے

    ہجر چبھنے لگے آنکھوں میں آ جانا کبھی
    وصل کا لمحہ بھی سوغات ہوا کرتی ہے
    ٭٭٭
    یاسمین حبیب​
     
    مجاھدحسین گوھر نے اسے پسند کیا ہے۔

اس صفحے کو مشتہر کریں