1. اس فورم پر جواب بھیجنے کے لیے آپ کا صارف بننا ضروری ہے۔ اگر آپ ہماری اردو کے صارف ہیں تو لاگ ان کریں۔

ایک غزل : دن بیچا اور رات خریدی

'آپ کی شاعری' میں موضوعات آغاز کردہ از ًمحمد سعید سعدی, ‏27 اکتوبر 2019۔

  1. ًمحمد سعید سعدی
    آف لائن

    ًمحمد سعید سعدی ممبر

    شمولیت:
    ‏19 جون 2016
    پیغامات:
    153
    موصول پسندیدگیاں:
    178
    ملک کا جھنڈا:
    دن بیچا اور رات خریدی
    اشکوں کی سوغات خریدی

    آنسو خشک ہوئے تو لوگو
    آنکھوں نے برسات خریدی

    دل کے خالی پن کی خاطر
    یادوں کی بارات خریدی

    ہم نے خود کو گروی رکھ کر
    ایک سنہری دھات خریدی

    تیری جیت کی خاطر سعدی
    ہم نے اپنی مات خریدی
     

اس صفحے کو مشتہر کریں