1. اس فورم پر جواب بھیجنے کے لیے آپ کا صارف بننا ضروری ہے۔ اگر آپ ہماری اردو کے صارف ہیں تو لاگ ان کریں۔

اشتہار " تلاش گمشدہ " برائے خلوص

'متفرقات' میں موضوعات آغاز کردہ از ساتواں انسان, ‏29 جون 2020۔

  1. ساتواں انسان
    آف لائن

    ساتواں انسان ممبر

    شمولیت:
    ‏28 نومبر 2017
    پیغامات:
    6,095
    موصول پسندیدگیاں:
    1,992
    ملک کا جھنڈا:
    ہم سے خلوص گم ہوگیا ہے
    اس کی عمر کئی سو سال ہے
    بڑھاپے کی وجہ سے کافی کمزور ہوگیا ہے
    گھر میں موجود خودغرضی کے ساتھ ان بن ہوجانے ہر ناراض ہوکر کہیں چلا گیا ہے
    اس کے بارے میں گمان ہے کہ انسانوں کے جنگل نے اسے نگل لیا ہے
    اس کا چھوٹا اور لاڈلا بھائی اخوت اور بہن حب الوطنی سخت پریشان ہیں
    اس کے دوست محبت اور مہربانی بھی اس کی تلاش میں نکلے ہوئے ہیں
    اس کی عدم موجودگی میں اس کے دشمن شرپسند نے تعصب اور ہوس کے ساتھ مل کر تباہی مچا رکھی ہے
    اس کی جڑواں بہن شرافت کا اس کے فراق کی وجہ سے انتقال ہوچکا ہے
    شرافت کے غم میں حیا بھی چل بسی ہے
    اس کا بڑا بھائی انصاف اس کی جدائی میں رو رو کر اندھا ہوچکا ہے
    اس کے والد محترم معاشرہ کو سخت فکر لاحق ہے
    اس کی والدہ انسانیت شدید بیمار ہے آخری بار اپنے جگر گوشہ خلوص کو دیکھنا چاہتی ہیں
    جس کو ملے وہ اسے انسانوں کے پاس پہنچا دے ورنہ انسانیت دم توڑ دے گی
    اگر وہ خود بھی پڑھے تو براہ کرم واپس آجائے
    اسے کچھ نہیں کہا جائے گا
     
    ملک بلال اور زنیرہ عقیل .نے اسے پسند کیا ہے۔
  2. زنیرہ عقیل
    آف لائن

    زنیرہ عقیل ممبر

    شمولیت:
    ‏27 ستمبر 2017
    پیغامات:
    20,230
    موصول پسندیدگیاں:
    9,355
    ملک کا جھنڈا:
    محترم انسان صاحب..!!
    خلوص اب اس دنیا میں نہیں رہا
    محبت ، اخوت، حب الوطنی ، انصاف ، شرافت اور معاشرے کو اللہ صبر جمیل عطا فرمائے
    اور خلوص کی 1947 والی مثالوں کو پاکستان کی تاریخ کی کتابوں میں اعلیٰ مقام عطا فرمائے

    چند اشعار خلوص کی نظر.................

    زندگانی تھی تری مہتاب سے تابندہ تر
    خوب تر تھا صبح کے تارے سے بھی تیرا سفر

    مثل ایوان سحر مرقد فروزاں ہو ترا
    نور سے معمور یہ خاکی شبستاں ہو ترا

    آسماں تیری لحد پر شبنم افشانی کرے
    سبزۂ نورستہ اس گھر کی نگہبانی کرے
     
    ملک بلال نے اسے پسند کیا ہے۔
  3. ملک بلال
    آف لائن

    ملک بلال منتظم اعلیٰ سٹاف ممبر

    شمولیت:
    ‏12 مئی 2010
    پیغامات:
    22,137
    موصول پسندیدگیاں:
    7,369
    ملک کا جھنڈا:
    اسی طرح کی ایک نظم پنجابی شاعر شِو کمار بٹالوی نے کہی تھی۔

    اشتہار

    اک کڑی جہدانام محبت
    گم ہے۔ گم ہے گم ہے !
    ساد مردای سوہنی پھبت
    گم ہے۔ گم ہے۔ گم ہے!

    صورت اوس دی پریاں ورگی
    سیرت دی اوہ مریم لگدی
    ہسدی ہے تاں پھل جھڑوے نیں
    ٹردی ہے تاں غزل ہے لگدی
    لم سلمی سرو قد دی
    عمر اجے ہے مرکے اگ دی
    پر نیناں دی گل سمجھدی !

    گمیاں جنم جنم ہن ہوئے
    پر لگدے جیوں کل دی گل ہے
    ایوں لگداے جیوں اج دی گل ہے
    ایوں لگداے جیوں ہن دی گل ہے
    ہنے تاں میرے کول کھڑی سی
    ہنے تاں میرے کول نہیں ہے
    ایہ کیہ چھکل ہے ایہ کیہی بھٹکن
    سوچ میری حیران بڑی ہے
    نظر میری ہر آؤندے جاندے
    چہرے دا رنگ پھول رہی ہے
    اوس کڑی نوں ٹول رہی ہے
    سانجھ ڈھلے بازاراں دے جد
    موڑاں تے خشبو اگدی ہے
    ویلھ ، تھکاوٹ ، بے چینی جد
    چوراہیاں تے آ جڑدی ہے
    رولے لپی تنہائی وچ
    اوس کڑی دی بڑکھاندی ہے
    اوس کڑی دی بڑدسدی ہے

    ہر چھن مینوں ایوں لگداہے
    ہر دن مینوں ایوں لگداہے
    جڑے جشن نین بھیڑاں وچوں
    جڑی مہک دے جھڑمٹ وچوں
    اوہ مینوں آواز دوے گی
    میں اوہنوں پہچان لوے گی
    پر اس رولے دے ہڑ وچوں
    کوئی مینوں آوازنہ دیندا
    کوئی وی میرے ول نہ ویہندا

    پر خورے کیوں پٹلا لگدا
    پر خورے کیوں جھولا پیندا
    ہر دن ہر اک بھیڑ جڑی چوں
    بت اوہدا جیوںلنگھ کے جاندا
    پر میونںہی نظر نہ آؤندا
    گم گئی میں اوس کڑی دے
    چہرے دے وچ گمیا رہندا
    اوس دے غم وچ گھلدا رہندا
    اوس دے غم وچ کھردا جاندا!

    اوس کڑی نوں میری سونہہ ہے
    اوس کڑی نوں آپنی سونہہ ہے
    اوس کڑی نوں سبھ جگ دی سونہہ ہے
    اوس کڑی نوں جگ دی سونہہ ہے
    اوس کڑی نوں رب دی سونہہ ہے
    جے کتے پڑھدی سندی ہووے
    اک واری آکے مل جاوے
    وفا میری نوں داغ نہ لاوے
    نہیں تاں میتھوں جیا نہ جاندا
    گیت کوئی لکھیا نہ جاندا !

    اک کڑی جہدا نام محبت
    گم ہے ۔ گم ہے ۔ گم ہے !
    ساد مرادی سوہنی پھبت
    گم ہے ۔ گم ہے ۔ گم ہے !
     

اس صفحے کو مشتہر کریں