1. اس فورم پر جواب بھیجنے کے لیے آپ کا صارف بننا ضروری ہے۔ اگر آپ ہماری اردو کے صارف ہیں تو لاگ ان کریں۔

اردو میں اردو شاعری

'اشعار اور گانوں کے کھیل' میں موضوعات آغاز کردہ از مخلص انسان, ‏31 مئی 2016۔

  1. شکیل احمد خان
    آف لائن

    شکیل احمد خان ممبر

    شمولیت:
    ‏10 نومبر 2014
    پیغامات:
    1,519
    موصول پسندیدگیاں:
    1,145
    ملک کا جھنڈا:
    للہ بلا تحقیق اشعار کو علامہ اقبال سے منسوب مت کیجیے
    یہ قطعہ ،باعتبارِ طرزو اُسلوب و لغات ولفظیات کسی بھی
    طرح حضرت علامہ اِقبال ؒ ۔۔کا ہو نہیں سکتا۔۔۔۔۔۔
    اُن کے اُردُو کلام کے چاروں مجموعوں ؛بانگِ درا،بالِ
    جبریل،ضربِ کلیم اور اَرمغانِ حجازمیں ہی نہیں تمام
    مطبوعہ اور غیر مطبوعہ کلام میں ایسے کسی قطعے یا نظم یا
    غزل یا اشعار کانشان تو کیا گمان بھی عبث ہے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ظاہر کی آنکھ سے نہ تماشا کرے کوئی

    ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ہو۔ دیکھنا۔ تو دیدۂ دل، وا کرے کوئی
    ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔(علامہ اقبالؒ از بانگِ درا)
     
    ملک بلال نے اسے پسند کیا ہے۔
  2. زنیرہ عقیل
    آف لائن

    زنیرہ عقیل ممبر

    شمولیت:
    ‏27 ستمبر 2017
    پیغامات:
    21,126
    موصول پسندیدگیاں:
    9,745
    ملک کا جھنڈا:
    معافی کی طلبگار ہوں
    ایک نیوز چینل کے سائیٹ سے بنا تحقیق کے شئیر کیا تھا
    علامہ اقبالؒ میں شرمندہ ہوں
    اساتذہ کرام میں شرمندہ ہوں
    فورم ممبران میں شرمندہ ہوں
     
    شکیل احمد خان نے اسے پسند کیا ہے۔
  3. شکیل احمد خان
    آف لائن

    شکیل احمد خان ممبر

    شمولیت:
    ‏10 نومبر 2014
    پیغامات:
    1,519
    موصول پسندیدگیاں:
    1,145
    ملک کا جھنڈا:
    اللہ تعالیٰ آپ کو خوش اور ۔۔۔تمام اراکینِ محفل کو سلامت رکھے ۔
    روحِ اقبال سے معذرت بجا مگر ۔۔۔۔۔۔۔۔ہم آپ اس لیے برابر
    ہیں کہ۔۔۔۔۔ سب ایک دوسرے سے اچھی اچھی باتیں سیکھ رہے
    ہیں اوراچھی اچھی باتیں سکھابھی رہے ہیں۔۔۔۔۔اِس دھن ، شوق،
    جستجو اور جوش و خروش میں ۔۔۔۔ہم میں۔۔۔ کسی سے جو کبھی غلطی
    ہو جائے تو آپ بھی ضرور اصلاح فرمائیے کہ ایک ہاتھ دستِ احتیاج
    ہے تو ایک کریم الطبع۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

    لڑی کیونکہ اردو میں اُردو شاعری کی ہے اِس لیے آئیے سلسلے کو وہیں
    سے آگے بڑھائیں جہاں یہ تھوڑی دیر کو ٹھہرسا گیا تھا۔۔۔۔۔۔

    ۔۔جون ایلیا یاد آگئے۔اِس قدر سادہ و بے ساختہ شعر کہ خیال مجھے ۔۔
    میرصاحب کےہاں یا ہواں لے گیا کہ انھیں تو ان کی سادہ نگاری پر۔۔
    اہلِ نقد کی جانب سےسہلِ ممتنع کا باقاعدہ تمغا عطا ہوا ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
    شعر:

    ۔۔جو گزاری نہ جاسکی ہم سے۔۔۔ہم نے وہ زندگی گزاری ہے
    ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔(جون ایلیا)
     
    Last edited: ‏11 اکتوبر 2020
    ملک بلال اور زنیرہ عقیل .نے اسے پسند کیا ہے۔
  4. ساتواں انسان
    آف لائن

    ساتواں انسان ممبر

    شمولیت:
    ‏28 نومبر 2017
    پیغامات:
    7,185
    موصول پسندیدگیاں:
    2,271
    ملک کا جھنڈا:
    آج ہم دار پہ کھینچے گئے جن باتوں پر
    کیا عجب کل وہ زمانے کو نصابوں میں ملیں
     
    شکیل احمد خان اور زنیرہ عقیل .نے اسے پسند کیا ہے۔
  5. زنیرہ عقیل
    آف لائن

    زنیرہ عقیل ممبر

    شمولیت:
    ‏27 ستمبر 2017
    پیغامات:
    21,126
    موصول پسندیدگیاں:
    9,745
    ملک کا جھنڈا:
    اب تو سب دشنہ و خنجر کی زباں بولتے ہیں
    اب کہاں لوگ محبت کے نصابوں والے
    زندہ رہنے کی تمنا ہو تو ہو جاتے ہیں
    فاختاؤں کے بھی کردار عقابوں والے
     
    شکیل احمد خان نے اسے پسند کیا ہے۔
  6. ساتواں انسان
    آف لائن

    ساتواں انسان ممبر

    شمولیت:
    ‏28 نومبر 2017
    پیغامات:
    7,185
    موصول پسندیدگیاں:
    2,271
    ملک کا جھنڈا:
    تمنا درد دل کی ہو تو کر خدمت فقیروں کی
    نہیں ملتا یہ گوہر بادشاہوں کے خزینوں میں
     
    ملک بلال اور شکیل احمد خان .نے اسے پسند کیا ہے۔
  7. زنیرہ عقیل
    آف لائن

    زنیرہ عقیل ممبر

    شمولیت:
    ‏27 ستمبر 2017
    پیغامات:
    21,126
    موصول پسندیدگیاں:
    9,745
    ملک کا جھنڈا:
    خالی ہے دل فقیر کے کشکول کی طرح
    اس شہر بے وفا سے وفا کون لے گیا
     
    ملک بلال اور شکیل احمد خان .نے اسے پسند کیا ہے۔
  8. شکیل احمد خان
    آف لائن

    شکیل احمد خان ممبر

    شمولیت:
    ‏10 نومبر 2014
    پیغامات:
    1,519
    موصول پسندیدگیاں:
    1,145
    ملک کا جھنڈا:
    محبت۔ ہوگئی ۔عنقا۔ کہیں، پائی نہیں جاتی
    یاپھر ہے وہ خطا یہ اب جو دہرائی نہیں جاتی
    یہ بھرتے اور ابھرتے زخم کیا باغ و بہاراں ہے!
    مرے دل سے تری یادوں کی رعنائی نہیں جاتی​
    یہ مل کر رہ نہیں سکتے ’’کرونا ‘‘تو بہانہ تھا
    جدائی ہم میں وہ ڈالی کہ تنہائی نہیں جاتی
    غزل کیا ہے؟ یہ خونِ دل سے لکھی وہ کہانی ہے
    مزے سے، بیٹھ کر محفل میں جو گائی نہیں جاتی​
    کہے ۔جامِ شہادت نوشِ جاں کرتے ہی پروانہ
    یہ پیاس اِ ک ساغرِ ہستی سے بہلائی نہیں جاتی
    (شکیل احمد خان)​
     
    Last edited: ‏13 اکتوبر 2020
    زنیرہ عقیل اور ملک بلال .نے اسے پسند کیا ہے۔
  9. زنیرہ عقیل
    آف لائن

    زنیرہ عقیل ممبر

    شمولیت:
    ‏27 ستمبر 2017
    پیغامات:
    21,126
    موصول پسندیدگیاں:
    9,745
    ملک کا جھنڈا:
    سبحان اللہ
     
    شکیل احمد خان نے اسے پسند کیا ہے۔
  10. شکیل احمد خان
    آف لائن

    شکیل احمد خان ممبر

    شمولیت:
    ‏10 نومبر 2014
    پیغامات:
    1,519
    موصول پسندیدگیاں:
    1,145
    ملک کا جھنڈا:
    شکریہ !۔اِس لطف کا مجھ کو لگا جیسے کہیں
    "برگِ گل پر رکھ گئی شبنم کا موتی بادِ صبح"
     
    زنیرہ عقیل نے اسے پسند کیا ہے۔
  11. ساتواں انسان
    آف لائن

    ساتواں انسان ممبر

    شمولیت:
    ‏28 نومبر 2017
    پیغامات:
    7,185
    موصول پسندیدگیاں:
    2,271
    ملک کا جھنڈا:
    ہر ايک زخم کا چہرہ گلاب جيسا ہے
    مگر يہ جاگتا منظر بھی خواب جيسا ہے
     
    شکیل احمد خان نے اسے پسند کیا ہے۔
  12. زنیرہ عقیل
    آف لائن

    زنیرہ عقیل ممبر

    شمولیت:
    ‏27 ستمبر 2017
    پیغامات:
    21,126
    موصول پسندیدگیاں:
    9,745
    ملک کا جھنڈا:
    حالات کے قدموں پہ قلندر نہیں گرتا
    ٹوٹے بھی جو تارا تو زمیں پر نہیں گرتا
    گرتے ہیں سمندر میں بڑے شوق سے دریا
    لیکن کسی دریا میں سمندر نہیں گرتا
    سمجھو وہاں پھل دار شجر کوئی نہیں ہے
    وہ صحن کہ جس میں کوئی پتھر نہیں گرتا
    اتنا تو ہوا فائدہ بارش کی کمی کا
    اس شہر میں اب کوئی پھسل کر نہیں گرتا
    انعام کے لالچ میں لکھے مدح کسی کی
    اتنا تو کبھی کوئی سخن ور نہیں گرتا
    حیراں ہے کئی روز سے ٹھہرا ہوا پانی
    تالاب میں اب کیوں کوئی کنکر نہیں گرتا
    اس بندۂ خوددار پہ نبیوں کا ہے سایہ
    جو بھوک میں بھی لقمۂ تر پر نہیں گرتا
    کرنا ہے جو سر معرکۂ زیست تو سن لے
    بے بازوئے حیدر در خیبر نہیں گرتا
    قائم ہے قتیلؔ اب یہ مرے سر کے ستوں پر
    بھونچال بھی آئے تو مرا گھر نہیں گرتا
     
    شکیل احمد خان نے اسے پسند کیا ہے۔
  13. زنیرہ عقیل
    آف لائن

    زنیرہ عقیل ممبر

    شمولیت:
    ‏27 ستمبر 2017
    پیغامات:
    21,126
    موصول پسندیدگیاں:
    9,745
    ملک کا جھنڈا:
    اور چمکاتی ہے اس موتی کو سورج کی کرن
     
    شکیل احمد خان نے اسے پسند کیا ہے۔
  14. زنیرہ عقیل
    آف لائن

    زنیرہ عقیل ممبر

    شمولیت:
    ‏27 ستمبر 2017
    پیغامات:
    21,126
    موصول پسندیدگیاں:
    9,745
    ملک کا جھنڈا:
    حاضِر ہُوا میں شیخِ مجدّدؒ کی لحَد پر
    وہ خاک کہِ ہے زیرِ فلک مطلعِ انوار
    اس خاک کے ذرّوں سے ہیں شرمندہ ستارے
    اس خاک میں پوشیدہ ہے وہ صاحبِ اسرار
    گردن نہ جھُکی جس کی جہانگیر کے آگے
    جس کے نفَسِ گرم سے ہے گرمیِ احرار
    وہ ہِند میں سرمایۂ ملّت کا نِگہباں
    اللہ نے بروقت کیا جس کو خبردار
    کی عرض یہ میں نے کہ عطا فقر ہو مجھ کو
    آنکھیں مری بِینا ہیں، و لیکن نہیں بیدار!
    آئی یہ صدا سلسلۂ فقر ہُوا بند
    ہیں اہلِ نظر کِشورِ پنجاب سے بیزار
    عارف کا ٹھکانا نہیں وہ خِطّہ کہ جس میں
    پیدا کُلَہِ فقر سے ہو طُّرۂ دستار
    باقی کُلَہِ فقر سے تھا ولولۂ حق
    طُرّوں نے چڑھایا نشۂ ’خدمتِ سرکار‘!
     
    شکیل احمد خان نے اسے پسند کیا ہے۔
  15. ساتواں انسان
    آف لائن

    ساتواں انسان ممبر

    شمولیت:
    ‏28 نومبر 2017
    پیغامات:
    7,185
    موصول پسندیدگیاں:
    2,271
    ملک کا جھنڈا:
    حادثے شہر کا دستور بنے جاتے ہیں
    اب یہاں سایہ دیوار نہ ڈھونڈھیں کوئی
     
    شکیل احمد خان نے اسے پسند کیا ہے۔
  16. شکیل احمد خان
    آف لائن

    شکیل احمد خان ممبر

    شمولیت:
    ‏10 نومبر 2014
    پیغامات:
    1,519
    موصول پسندیدگیاں:
    1,145
    ملک کا جھنڈا:
    صبحِ ازل سے شامِ ابد تک ہے۔۔۔۔۔،ایک دن
    یہ دِن ۔۔۔۔تڑپ تڑپ کے بسرکررہے ہیں ہم۔۔۔۔۔۔۔۔(رئیس امروہوی)
     
    Last edited: ‏15 اکتوبر 2020
    حنا شیخ 2 نے اسے پسند کیا ہے۔
  17. زنیرہ عقیل
    آف لائن

    زنیرہ عقیل ممبر

    شمولیت:
    ‏27 ستمبر 2017
    پیغامات:
    21,126
    موصول پسندیدگیاں:
    9,745
    ملک کا جھنڈا:
    ہم اپنی زندگی تو بسر کر چکے رئیسؔ
    یہ کس کی زیست ہے جو بسر کر رہے ہیں ہم
     
    حنا شیخ 2 اور شکیل احمد خان .نے اسے پسند کیا ہے۔
  18. حنا شیخ 2
    آف لائن

    حنا شیخ 2 ممبر

    شمولیت:
    ‏6 اکتوبر 2017
    پیغامات:
    1,634
    موصول پسندیدگیاں:
    725
    ملک کا جھنڈا:
    بہت خوب
     
  19. زنیرہ عقیل
    آف لائن

    زنیرہ عقیل ممبر

    شمولیت:
    ‏27 ستمبر 2017
    پیغامات:
    21,126
    موصول پسندیدگیاں:
    9,745
    ملک کا جھنڈا:
    زندگی زندہ دلی کا ہے نام
    مردہ دل خاک جیا کرتے ہیں
     
    شکیل احمد خان نے اسے پسند کیا ہے۔
  20. ساتواں انسان
    آف لائن

    ساتواں انسان ممبر

    شمولیت:
    ‏28 نومبر 2017
    پیغامات:
    7,185
    موصول پسندیدگیاں:
    2,271
    ملک کا جھنڈا:
    رات ملی تنہائی ملی اور جام ملا
    گھر سے نکلے تو کیا کیا آرام ملا
     
  21. ساتواں انسان
    آف لائن

    ساتواں انسان ممبر

    شمولیت:
    ‏28 نومبر 2017
    پیغامات:
    7,185
    موصول پسندیدگیاں:
    2,271
    ملک کا جھنڈا:
    ہم تو جانے کب سے ہیں آوارہ ظلمت مگر
    تم ٹھہر جاؤ تو پل بھر میں گزر جائے گی رات
     
  22. ساتواں انسان
    آف لائن

    ساتواں انسان ممبر

    شمولیت:
    ‏28 نومبر 2017
    پیغامات:
    7,185
    موصول پسندیدگیاں:
    2,271
    ملک کا جھنڈا:
    زندگی اپنی جب اس شکل سے گزری غالب
    ہم بھی کیا یاد کریں گے کہ خدا رکھتے تھے
     
  23. ساتواں انسان
    آف لائن

    ساتواں انسان ممبر

    شمولیت:
    ‏28 نومبر 2017
    پیغامات:
    7,185
    موصول پسندیدگیاں:
    2,271
    ملک کا جھنڈا:
    حائل ہے حجاب شرم و حیا دیدار تو کیا گفتار تو کیا
    مبہم ہیں اشارے سب اس کے انکار تو کیا اقرار تو کیا
     
  24. ساتواں انسان
    آف لائن

    ساتواں انسان ممبر

    شمولیت:
    ‏28 نومبر 2017
    پیغامات:
    7,185
    موصول پسندیدگیاں:
    2,271
    ملک کا جھنڈا:
    اگر زندہ رہیں تو آئیں گے اے باغباں پھر بھی
    اسی گلشن اسی ڈالی پہ ہو گا آشیاں پھر بھی
     
  25. ساتواں انسان
    آف لائن

    ساتواں انسان ممبر

    شمولیت:
    ‏28 نومبر 2017
    پیغامات:
    7,185
    موصول پسندیدگیاں:
    2,271
    ملک کا جھنڈا:
    ہم ہوگئے شہید یہ اعزاز تو ملا
    اہل جنوں کو نکتہ آغاز تو ملا
     
  26. زنیرہ عقیل
    آف لائن

    زنیرہ عقیل ممبر

    شمولیت:
    ‏27 ستمبر 2017
    پیغامات:
    21,126
    موصول پسندیدگیاں:
    9,745
    ملک کا جھنڈا:
    کون کہتا ہے کہ موت آئی تو مر جاؤں گا
    میں تو دریا ہوں سمندر میں اتر جاؤں گا

    [​IMG]
     
  27. ساتواں انسان
    آف لائن

    ساتواں انسان ممبر

    شمولیت:
    ‏28 نومبر 2017
    پیغامات:
    7,185
    موصول پسندیدگیاں:
    2,271
    ملک کا جھنڈا:
    اس عارضی دنیا میں ہر بات ادھوری ہے
    ہر جیت ہے لا حاصل ہر مات ادھوری ہے
     
  28. ساتواں انسان
    آف لائن

    ساتواں انسان ممبر

    شمولیت:
    ‏28 نومبر 2017
    پیغامات:
    7,185
    موصول پسندیدگیاں:
    2,271
    ملک کا جھنڈا:
    کوئی پھول سا ہاتھ کاندھے پہ تھا
    میرے پاؤں شعلوں پہ جلتے رہے
     
  29. ساتواں انسان
    آف لائن

    ساتواں انسان ممبر

    شمولیت:
    ‏28 نومبر 2017
    پیغامات:
    7,185
    موصول پسندیدگیاں:
    2,271
    ملک کا جھنڈا:
    بچھڑ کے تجھ سے مجھے ہے امید ملنے کی
    سنا ہے روح کو آنا ہے پھر بدن کی طرف
     
  30. ساتواں انسان
    آف لائن

    ساتواں انسان ممبر

    شمولیت:
    ‏28 نومبر 2017
    پیغامات:
    7,185
    موصول پسندیدگیاں:
    2,271
    ملک کا جھنڈا:
    ہوا تو ہے ہی مخالف مجھے ڈراتا ہے کیا
    ہوا سے پوچھ کے کوئی دیئے جلاتا ہے کیا
     

اس صفحے کو مشتہر کریں