1. اس فورم پر جواب بھیجنے کے لیے آپ کا صارف بننا ضروری ہے۔ اگر آپ ہماری اردو کے صارف ہیں تو لاگ ان کریں۔

اب تو منہ سے بول مجھ کو دیکھ دن بھر ہو گیا

'اردو شاعری' میں موضوعات آغاز کردہ از intelligent086, ‏26 اکتوبر 2019۔

  1. intelligent086
    آف لائن

    intelligent086 ممبر

    شمولیت:
    ‏28 اپریل 2013
    پیغامات:
    1,722
    موصول پسندیدگیاں:
    206
    ملک کا جھنڈا:
    اب تو منہ سے بول مجھ کو دیکھ دن بھر ہو گیا
    اے بتِ خاموش کیا سچ مچ کا پتھر ہو گیا
    اب تو چپ ہو باغ میں نالوں سے محشر ہو گیا
    یہ بھی اے بلبل کوئی صیاد کا گھر ہو گیا
    التماسِ قتل پر کہتے ہو فرصت ہی نہیں
    اب تمہیں اتنا غرور اللہ اکبر ہو گیا
    محفلِ دشمن میں جو گزری وہ میرے دل سے پوچھ
    ہر اشارہ جنبشِ ابرو کا خنجر ہو گیا
    آشیانے کا کیا بتائیں کیا پتہ خانہ بدوش
    چار تنکے رکھ لئے جس شاخ پر گھر ہو گیا
    حرس تو دیکھ فلک بھی مجھ پہ کرتا ہے ظلم
    کوئی پوچھے تو بھی کیا ان کے برابر ہو گیا
    سوختہ دل میں نہ ملتا تیر کا خوں اے قمر
    یہ بھی کچھ مہماں کی قسمت سے میسر ہو گیا
    قمر جلالوی​
     

اس صفحے کو مشتہر کریں